26 اپریل، 2014

شاباش کراچی پولیس؛ 10 معصوم بچوں پر اقدام قتل اور سرکاری اراضی پر قبضے کا مقدمہ بناڈالا

 


کراچی: لاہور اور گوجرانوالہ کے بعد شہر قائد کی پولیس نے بھی 6 ماہ کی دودھ پیتی بچی سمیت 10 معصوم بچوں پر اقدام قتل اور سرکاری اراضی پر قبضہ کرنے کا مقدمہ درج کردیا۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق پولیس کی جانب سے 6 ماہ کی دودھ پیتی بچی سمیت ایک، 2اور 3 سال سمیت 7 سال تک 10 معصوم بچوں کو پولیس اہلکاروں کو اسلحے کے زور پر جان سے مارنے کی کوشش اور سرکاری اراضی پر قبضے کا مقدمہ درج کرکے جسمانی ریمانڈ حاصل کرنے کے لئے عدالت میں پیش کیا۔ اس موقع پر جوڈیشل مجسٹریٹ ویسٹ سہیل احمد مشہودی نے پولیس اہلکاروں پر سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے تمام بچوں کو فوری رہا کرنے کا حکم دیا، جوڈیشل مجسٹریٹ نے پولیس کی سرزنش کرتے ہوئے پوچھا کہ کس طرح یہ معصوم بچے اتنی سنگین واردات کرسکتے ہیں اور کس قانون کے تحت ان پر مقدمہ درج کیا گیا ۔

واضح رہے کہ شہر قائد میں ٹارگٹ کلنگ، اغوا برائے تاوان، بھتہ خوری اور منشیات فروشی سمیت دیگر بے شمار جرائم کی وجہ سے شہری ایک اذیت میں مبتلا ہیں اور پولیس کی کارکردگی پر نظرڈالیں تو ادھر ہمیں شرمندگی کے سوا کچھ نظر نہیں آتا، ہرروز شہر قائد میں ٹارگٹ کلرز آزادنہ گھوم کر متعدد شہریوں کی زندگی کا چراغ گل کردیتے ہیں، سیکڑوں شہریوں سے روزانہ کی بنیاد پر ان سے موبائل ، نقدی اورگاڑیاں چھین لی جاتی ہیں لیکن پولیس اپنی چابکدستی کا مظاہرہ 
صرف معصوم شہریوں پر ہی کرتی نظرآتی ہے۔
ایکسپریس نیوز




6 months baby nominated in FIR by Karachi Police by TheExpressNews

کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں

Recent Posts Widget