21 اگست، 2014

Urdu Ghazal - Khamoosh hain Aarasto wa Afalatoon mere agey...dawa nhi karta koi mauzoon mere agay...wah wah

غزل​
خاموش ہیں ارسطو و فلاطوں مرے آگے ​
دعویٰ نہیں کرتا کوئی موزوں مرے آگے​
دانش پہ گھمنڈ اپنی جو کرتا ہے بہ شدّت​
واللہ کہ وہ شخص ہے مجنوں مرے آگے​
لاتا نہیں خاطر میں سُخن بیہودہ گو کا​
اعجاز میسحا بھی ہے افسوں مرے آگے​
میں گوز سمجھتا ہوں سدا اُس کی صدا کو​
گو بول اُٹھے ادھی کا چوں چوں مرے آگے​
سب خوشہ ربا ہیں مرے خرمن کے جہاں میں ​
کیا شعر پڑھے گا کوئی موزوں مرے آگے​
قدرت ہے خدا کی کہ ہوئے آج وہ شاعر​
طفلی میں جو کل کرتے تھے غاں غوں مرے آگے​
اُستاد ہوں میں مصحفی حکمت کے بھی فن میں​
ہے کودک نودرس فلاطوں مرے آگے​
(مصحفی)​

کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں

Recent Posts Widget