6 نومبر، 2014

Another #Pakistani #beheaded in Saudi for smuggling heroin



منشیات کی اسمگلنگ پر ایک اور پاکستانی کا سر قلم
05 نومبر 2014
ریاض(قدرت نیوز) سعودی عرب میں ایک پاکستانی شہری کا منشیات کی اسمگلنگ کے جرم میں سر قلم کردیا گیا ہے۔سرکاری نیوز ایجنسی ایس پی اے نے وزارتِ داخلہ کے حوالے سے بتایا ہے کہ محمد صادق حنیف نامی شخص ہیروئن کی ایک بڑی مقدار اپنے پیٹ میں چھپا کر سعودی عرب لانے کی کوشش کر رہا تھا، جس دوران اسے گرفتار کیا گیا تھا۔بدھ کے روز مشرقی قصبے خوبر میں دی جانے والی اس سزائے موت کے بعد سلطنت میں رواں سال دی جانے والی سزائے موت کی تعداد 63 ہوگئی ہے۔اس سے قبل اکتوبر میں بھی چار پاکستانیوں کو منشیات اسمگلنگ کے جرم میں سزائے موت دی جا چکی ہے۔اقوامِ متحدہ نے سعودی عرب میں سزائے موت کی بڑھتی ہوئی شرح پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ ان سزاؤں پر عملدرآمد فوراً روک دیا جائے۔اقوام متحدہ کے خصوصی نمائندے کرسٹوف ہائنز کے مطابق سعودی عرب میں ہونے والے ٹرائلز میں شفافیت موجود نہیں ہوتی، جب کہ ملزمان کو وکیل کی خدمات بھی حاصل نہیں ہوتیں۔


RIYADH: Saudi Arabia on Friday beheaded a Pakistani man who had been convicted of smuggling heroin into the kingdom, the interior ministry said.
Butha Mushtaq was the third Pakistani to be executed on drug charges in Saudi Arabia since October 15.
He was found guilty of smuggling heroin concealed in capsules which he had swallowed. He was executed in the capital Riyadh, the ministry said in a statement carried by the official SPA news agency.
His execution brings to 59 the number of people beheaded in Saudi Arabia this year.
Last year, 78 people of various nationalities were executed in the Arab state.
In September, a United Nations independent expert called for moratorium on the death penalty in Saudi Arabia, which has faced harsh criticism from human rights group for carrying out executions.

کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں

Recent Posts Widget