30 اپریل، 2015

4 ماہ کا بچہ شدید ترین زلزلے کے 22 گھنٹے بعد ملبے کے نیچے سے زندہ نکال لیا گیا

جسے اللہ رکھے اُسے کون چکھے:  4 ماہ کا بچہ شدید ترین زلزلے کے 22 گھنٹے بعد ملبے کے نیچے سے زندہ نکال لیا گیا 

نیپال ( ٹی او سی مانیٹرنگ ڈیسک )  موت و حیات کا اختیار صرف اور صرف اللہ تعالی کے ہاتھ میں  ہے اس لئے تو کہتے ہیں جسے اللہ رکھے اُسے کون چکھے ۔ نیپال میں آنے والے 7.8 کی شدت کے تباہ کن زلزلے نے نیپال  میں تباہی مچادی ، اونچی اونچی تاریخی عمارتیں ، مندر اور علامتی ٹاور تک کو نہیں بخشا ۔ عمارتیں ملبے کے ڈھیر میں بدل گئیں۔ ایسے ہی ایک تباہ شدہ عمارت کے ملبے کے نیچے سے ایک 4 ماہ کے بچے کو 22 گھنٹے کے بعد زندہ نکال لیا گیا ہے ۔  زلزلے اتنا تباہ کن تھا کہ 5000 جانیں اس کی نذر ہوگئیں ۔ 

اس واقعے کا دلچسپ پہلو یہ ہے کہ نیپالی فوج عمارت کی حالت دیکھ کر چھوڑ گئے تھے کہ اس کے نیچے کوئی زندی نہیں بچ سکتا ۔ تاہم  گھنٹوں بعد فوجی ملبے کے نیچے سے بچے کے رونے کی آوازیں سن کر اسی جگہ پر واپس آئے اور ریسکیو کاکام شروع کیا اور بچے کو زندہ حالت میں ملبے کے نیچے سے نکالنے میں کامیاب ہوگئے۔ اور بچے کی حالت مستحکم ہے اور بچے کے جسم پر کسی قسم کے زخم بھی نہیں ہیں۔




کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں

Recent Posts Widget