اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

4 ستمبر، 2015

کراچی کے ایک پرائیویٹ سکول میں پیش آنے والا ایک اور دل خراش واقعہ

 



کراچی (ٹی او سی مانیٹرنگ) کراچی کے ایک مقامی سکول کی 11 سالہ طالبہ نے سکول کی چھت سے کود کر خوکشی کرلی۔ بچی یا تو سکول کے ماحول سے تنگ تھی یا پھر گھریلو پریشانیوں کی وجہ سے زندگی سے بے زار تھی۔ سکول انتظامیہ نے سارہ ملبہ گھر کے ماحول پر ڈال کر خود کو بری کرنے کی کوشش کی ہے ان کا کہنا کہ بچی گھریلوں حالات سے تنگ تھی جس کے پیش نظر اس نے موت کو گلے لگا لیا۔ گزشہ دنوں پیش آنے والے واقے کی طرح یہاں بھی لڑکی نے اپنے اس اقدام سے اپنی ایک سہیلی کو بتایا تھا کہ اس کی زندگی ختم ہونے کا وقت قریب آگیا ہے اور اسے مرنا ہے۔ (ہوسکتا ہے کہ یہ بات من گھڑت ہو) کیونکہ گھر والے بچی کی چھت سے گرانے کا ذمہ دار سکول انتظامیہ کو قرار دے رہے ہیں کہ ان کی غفلت سے ان کی بچی سکول کی چھت سے گر گئی۔ 

بات ان کی بھی صحیح ہے کیونکہ اگر بچی گھریلوں حالات سے تنگ ہوتی تو سکول کی چھت سے کیوں کود جاتی۔۔ گھر میں ہی خود کشی کرتی۔۔۔

لڑکی علیشا کی حالت انتہائی نازک ہے اور وہ ہسپتال میں وینٹی لیٹر پر زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا ہے۔ اہل خانہ کی عوام سے علیشا کے لئے دعا کی اپیل ہے اور ساتھ ساتھ مخیر حضرات سے علاج کے لئے مدد کی درخوست بھی کررہے ہیں۔ 

کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں