جولائی 5, 2016

نیا انداز نیا زمانہ نئے لوگ، عید کے پرمسرت موقع پر ، تسلیمات کا انداز بھی بدل گیا، آئیے آپ بھی سیکھئے

 

تحریر ابوالحسنین: ٹائمز آف چترال  5 جولائی 2016

وقت کے ساتھ ساتھ ہر چیز بدل جاتی ہے۔ پرانی چیزوں کی جگہ نئی چیزیں لے لیتی ہیں، ٹیلی فون آیا تو خط لکھنے کا رواج ختم ہوگیا، ای میل آیا تو فیکس ختم ہوگیا۔ سوشل میڈیا، ایس ایم ایس (شارٹ مسیجنگ سروس)  آئے تو عید کارڈز بھیجنے کا رواج  دم توڑ گیا۔ جی ہاں جدید ٹیکنالوجی کے شاہ کار سوشل میڈیا اور ایس ایم ایس ، ای میل اور دیگر سروسز نے  رشتہ داروں ، عزیزوں اور دوستوں کو خوبصورت دلکش عید کارڈ بھیجنے کے رواج کو ایسے ختم کردیا جیسے گدھے کے سر پر سینگ۔ ایک زمانہ تھا کہ عید سے  چند دن پہلے بازاروں ، گلی محلوں کی چھوٹی بڑی دکانوںمیں  دیدہ زیب، اور  دل سے لکھے گئے تسلمیات کے لفظوں سے بھر پور کارڈ دلکش انداز میں لگائے نظر آتے تھے۔  کارڈ کے انتخاب کے لئے دور دراز تک جانا  پڑتا تھا۔  

لیکن اب تمام کام  انگوٹھے کے نیچے ہوتا ہے۔  خوبصورت کارڈ ڈھونڈنے بازار جانے کے بجائے ، خوبصورت مسیجز تلاش کرنے کے لئے کئی کئی ویب سائیٹس پر جانا پڑتا ہے۔  ای کارڈز میں خوبصورت مسیج، سمبولک ٹیکسٹ وغیرہ  آج کل کے نواجوانوں میں بے حد مقبول ہیں۔ عید کارڈ بھیجنے کا رواج تقریبا ختم ہی ہوگیا ہے۔ ASCII یعنی امریکن سٹینڈرڈ کوڈ فار انفارمیشن انٹر چینج  سے ایسے خوبصور ت  ڈیزائن تخلیق کئے جائے ہیں جو دیکھنے والا  دنگ رہ جاتا ہے۔  اور بھیجنے والے  کی قدر دانی   کا اندازہ لگا سکتاہے۔ 

 سستی اور آسان ٹیکناجی کی وجہ سے عید کارڈ بھیجنے کا رواج ختم ہوگیا اب نہ دکانوں میں عید کارڈ نظر آتے ہیں نہ خریدنے والے۔  ہاں شادی کارڈ وغیرہ ضرور ملتے ہیں۔  ہاں شاید کہیں ایس ایم پیکیجز عید کے دنوں میں عدم دستیابی، اور قیمتوں کی وجہ سے شاید ہی کوئی عید کارڈبھیجتا ہو۔  ایک اور بات کارپوریٹ دنیا میں کارڈ بھیجے جاتے ہیں۔ ایک زمانہ تھا کہ دوستوں، عزیزوں اور اقارب کے لئے الگ الگ ڈیزائن کے کارڈ منتخب کرنے  لوگ بازاروں میں اچھا خاصا وقت لگا دیتے تھے۔ یہ نہیں کہ عید کارڈ بھیجنے کا رواج ختم ہوا  بلکہ  طریقہ تبدیل ہوگیا ہے۔ لوگ اپنے عزیزوں اور دوستوں کواتنا ہی کارڈ بھیجتے ہیں جیسے پہلے بھیجتے تھے۔ بلکہ اس سے بھی  کہیں زیادہ آج کل میں بھیجتے ہیں کیونکہ اس کے لئے انہیں کوئی اضافی وقت درکار نہیں ہوتا ۔ 

عید والے دنوں موبائل فون سروسز بعض اوقات بھاری ٹریفک کی وجہ سے عارضی طور پر بند بھی ہوجاتے ہیں۔ کیونکہ ہر ایک ایس ایم ایس بھیج اور وصول کررہا ہوتا ہے۔  اس لئے موبائل فون کمپنیاں ایس ایم ایس پیکیجز اور فون پیکجز بند کردیتے ہیں۔

آئیے ہم آپ ایک نئی چیز سے روشناس کراتے ہیں ، جی ہاں ASCII یعنی امریکن سٹینڈرڈ کوڈ فار انفارمیشن انٹر چینج  ۔  آپ میں کم تر لوگ اس سروس سے واقف ہونگے جو نہیں ہیں اب ہوجائیں۔ ASCII کوڈز آپ کے کمپیوٹر یا دیگر ڈیوائسز میں ہی موجود ہوتے ہیں لیکن بات ہے ان سے واقفیت کی۔  ASCII کا آغاز 1960 سے ہوا تھا۔  ان کوڈز کو  تخلیقی انداز میں جوڑ کو  کیا نہیں بنایا جاسکتا ہے۔ آپ کے اندر جتنی زیادہ تخلیقی صلاحیت ہوگی آپ اتنی خوبصورتی سے جو چاہیں تخلیق کرسکیں گے۔   آئیے ہم  آ پ کو چند ایک ویب سائٹس دے دیتے ہیں جہاں سے آپ بنے بنائے    ڈیزائن کاپی بھی کرسکتے ہیں اور خود بھی تخلیق کرسکے ہیں۔




کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں

Recent Posts Widget