10 دسمبر، 2015

کشمیرمیں لڑنے والے مجاہدین ہیں، دہشت گرد نہیں : پرویز مشرف

 

اسلام آباد(ٹائمزآف چترال مانیٹرنگ10 دسمبر2015) کشمیر میں طالبان کی موجودگی کے امکانات کو رد کرتے ہوئے  پاکستان کے سابق  آرمی چیف اور صدر جنرل (ر) پرویز مشرف نے کہا کہ کشمیر میں لڑنے والے لوگ کشمیری مجاہدین ہیں دہشت گرد نہیں۔ 


بی بی سی اردو کو انٹرویو ویتے ہوئے مرد آہن (پرویز مشرف ) نے کہا: "ہم انہیں مجاہدین کہتے ہیں ان کو کشمیر اور پاکستان دونوں جگہ سے حمایت حاصل ہے ۔ کشمیر میں بھارتی مظالم کو دیکھتے ہوئے لشکر طیبہ اور جیش محمد جیسی تنظیمیں بھی  کشمیری بھائیوں اور بہنوں کے لئے اپنی جان دینے کے مقصد کے ساتھ آگے آئے ہیں۔ انہیں طالبان یا دہشت گردوں نہیں بلایا جاتا ۔ وہ ہمارے مجاہدین اور آزادی کے جنگجو ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میں کشمیر کے مسئلے کے حل کی طرف بڑھ رہا تھا یہ بہترین موقع تھا جب دونوں ریاستوں کے سربراہان ایک ہی نقطہ نظر پر آگئے تھے۔ مشرف نے کہا  میں اور بھارتی وزیر اعظم اٹل بہاری واتپائی نے اتفاق کیا تھا کہ کشمیر میں مظالم اب ختم جوجانے چاہئں۔

بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کے بارے میں انہوں نے کہا کہ مودی بات کو گھمانا چاہتے ہیں اور پاکستان کو محکوم بنانا چاہتے ہیں۔  انہیں اپنا نقطہ نظر تبدیل کرنا چاہئے ورنہ چیزیں آگے نہیں بڑھیں گی ۔

کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں

Recent Posts Widget