21 مارچ، 2016

چترال کے نایاپ درخت ’ساروز‘ کی بقاء کو درپیش خطرات، اور حکومت کی توجہ : حمید الرحمن حقی

 

چترال کے نایاپ درخت ’ساروز‘ کی بقاء کو درپیش خطرات، اور حکومت کی توجہ :  حمید الرحمن حقی ..

خیبر پختونحوا حکومت جہاں مختلف عوامی امور پر توجه دیکر عوام کو براه راست مثبت ثمرات پهنچانے کی کوشش کر رہی ہے، وہیں عوام کو پہلے سے درپیش مسائل اور مشکلات کم کرنے کی بھی بھر پور تگ دو کر تے نظر آ رہی ہے..اگرچه عوامی مسائل و مشکلات بہت ذیاده اور ذرائع و وسائل بہت کم ہیں لیکن پهر بھی کچھ مسائل ایسے ھوتےہیں جو فوری حل اور توجه طلب ہوتے ہیں.....

چترال کے انتہائی دور افتاده اور پسمانده گاوں پرواک کے باشندے اگرچه بہت سارے مسائل سے دوچار ہیں لیکن کچھ مسائل ایسے ہیں جن پر حکومت یا دوسرے ادارے اگر بروقت توجھ نه دیے تو اسکے بہت منفی اثرات پورے چترال پر بلکه پورے ملک پر براه راست پڑ سکتے ھیں...

انهی مسائل میں سے جلانے کی لکڑی کا مسئله ہے.. حکومت اور دوسرے ادارے اگر بروقت اس مسئلے پر توجه نه دیے تو ملک یقینا بہت جلد ایک قومی اثاثے سے محروم ہوجائے گا...اسکی وجھ یہ کہ عوام پرواک گزشته پچیس تیس سالوں سے ساروز(Saroz) کے نایاب درخت کو ناپید ہونےکو محسوس کرکے اپنے محتلف چرگاہوں میں اس کی کٹائی اور دوسرے استعمال پر مکمل پاپندی لگا دی ہے اور گزشته پچیس تیس سالوں سے ملکی مفاد اور ماحولیاتی بہبود کی خاطر اس نایاب درخت کی حفاظت کرتے آ رہے ہیں اور اب یه چراگاه مکمل طور پر(sarv) ساروز کے درخت کا ایک گھنا جنگل بنا ہوا ہے..

اب علاقے کی غریب عوام جلانے کی لکڑی بہت مھنگی ملنے اور اکثر بلکل نہ ملنے کی بنا پر اس نایاب درخت کے جنگل کو اپنے جلانے کی ضروریات پوری کرنے اور دوسرے ضروریات کے لیے استعمال کرنے کی عرض سے اس چرگاه پر گزشته پچیس تیس سالوں سے لگی پابندی ہٹا کر اس جنگل سے ساروز کی کٹائی شروع کرنے والے ہیں۔۔ 

اگر عوام کی طرف اس طرح کا فیصله کیا گیا تو یقینأ اس سے پورے علاقے اور پورے ملک اور ضلعے پر بہت منفی اثرات مرتب ہو سکتے ہیں..اور سیلاب آنے اور دوسرے جنگلی حیات کےنقصان کی ساتھ ایک منفرد نایاب درخت کے ناپید ھوجانے کا بھی سو فیصد امکان ہے....

اس لیے حکومت وقت اور دوسرے اداروں سے بروقت توجھ کی گزارش ہے...تاکه علاقه، ملک اور ضلع ایک بڑے قومی نقصان سے بچ سکے......


کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں

Recent Posts Widget