31 مئی، 2016

گولین گول منصوبے پر کام تیز کرنے کی ہدایت، منصوبے سے 30 میگاواٹ بجلی چترال کو فراہم کردی جائے گی


چترال ، گولین گول ( ابوالحسنین: ٹائمز آف چترال 31 مئی 2016) گولین گول ، چترال میں زیر تعمیر 108 میگا واٹ کے ہائیڈرو پاور منصوبے پر کام تیز کردیا گیا ہے۔ منصوبےکا یونٹ نمبر 1 جوکہ ضلع چترال کے لئے مختص ہے ،کے قابل اعتمادی کو جانچنے کے لئے یونٹ کو اکتوبر 2017 میں چلایا جائے گا تاہم جون 2017 تک یونٹ نمبر 1 کو مکمل کرنے کی ہر ممکن کوشش کی جائے گی۔

یہ بات واپڈا کے چیرمین ظفر محمود نےمنصوبے کے دورے کے موقع پر بتائی۔ اس موقع پر واپڈا کے جنرل منیجر نارتھ (پروجیکٹس)، پروجیکٹ ڈائریکٹر اور منصوبے کے کنسلٹنٹس کے نمائندے اور ٹھیکہ دار موجود تھے۔ 
 
دورے کے دوران چیرمین واپڈ نے منصوبے کے تمام حصوں بشمول ڈیم، ڈائورژن ٹنل، پاور ہاوس، سوئچ یارڈ، ٹرانسمیشن لائن وغیرہ کا تفصیلی جائزہ لیا۔

اس موقع گفتگو کرتے ہوئے چیرمین واپڈا نے کہا کہ بشمول گولین گول پاور منصوبے کے تمام ہائیڈر پاور منصوبوں کی بروقت تکمیل سے نہ صرف بجلی کی لوڈ شیڈنگ میں کمی آئے گی بلکہ صارفین کو سستی بجلی بھی میسر آئے گی۔ انہوں نے وزیر اعظم نواز شریف کے حوالے سے کہا کہ وزیر اعظم نے ہدایت کی ہے کہ واپڈا گولین گول بجلی گھر سے 30 میگا واٹ بجلی ضلع چترال کو فراہم کرے۔ کیونکہ 2015 کے سیلاب کی وجہ سے چترال کے کئی علاقوں میں موجود چھوٹے ہائیڈ پروجیکٹس کو بڑا نقصان پہنچا ہے جس کی وجہ سے کئی علاقے بجلی سے محروم ہیں۔

چیرمین نے گولین گول ہائیڈرو منصوبے پر جاری کام پر اطمیان کا اظہار کرتے ہوئے منصوبے کے انتظامیہ کو منصوبے پر الیکٹرو میکینیکل کام مزید تیز کرنے کی ہدایت کردی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ سول اور الیکٹرومیکینکل کام کے ساتھ ساتھ ٹرانس میشن لائن کے کام کو بھی وقت پر مکمل کرنا اتنا ہی ضروری ہے۔ تاکہ منصوبے کی تکمیل کے بعد پیدا ہونے والی بجلی کو نیشنل گرڈ تک پنچائی جا سکے۔ 

چیرمین نے اس امید کا اظہار کیا کہ گولین گول منصوبہ نہ صرف بجلی کی طلب اور رسد کے درمیان خلا کو کرنے میں معاون ہوگا بلکہ صوبہ خیبر پختونخوا کے پسماندہ علاقوں جیسے چترال کے لئے معاشی اور معاشرتی بہتری میں بھی کردار ادا کرے گا۔ 

جنرل منیجر (پروجیکٹس) نارتھ نے گولین گول منصوبے پر کام پر چیرمین کو بریفینگ دی۔ انہوں نے منصوبے کو درپیش مسائل سے بھی آگاہ کیا جن میں مالی مسئلہ سب سے اہم ہے۔ 
 
گولین گول منصوبہ گولین کے مقام پر زیر تعمیر ہے۔ گولین چترال شہرسے 25 کلومیٹر اور پشاور سے 380 کلومیٹر کے فاصلے پر واقع ہے۔ دریائے مستوج میں شامل ہونے والے دریا گولین پر یہ منصوبہ بن رہا ہے۔ تکیمل کے بعد منصوبہ 442 ملین یونٹس سالانہ سستی ہائیڈل بجلی نیشنل گرد میں شامل کرے گا۔


کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں

Recent Posts Widget