30 جون، 2016

خیبر پختونخواہ حکومت نے بچٹ 17-2016 میں #چترال کو نظر انداز کردیا: سلیم خان

چترال ( نمائندہ ٹائمز آف چترال ) پاکستان پیپلز پارٹی کےضلعی صد راور ایم پی اے سلیم خان نے کہا ہے کہ خیبر پختونخواہ حکومت نے بجٹ 17-2016 میں ضلع چترال کو مکمل طور پر نظر انداز کردیا ہے، باوجود اس کے کہ 2015 میں آنے والے سیلاب اور زلزلوں نے چترال کے انفراسٹرکچر کو تباہ کرکے رکھ دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کہ کےپی حکومت صوبے کے صرف 5 اضلاع کو اہمیت دے رہی ہے اور وہیں پر ترقیاتی منصوبے دے رہی ہے۔ 

انہوں نے کہا کہ چترال میں سڑکیں، ایریگیشن کا نظام ، پلیں اور بجلی گھر گزشتہ سال کے سیلاب اور زلزلنے سے تباہ ہوچکے ہیں۔ کے پی حکومت نے ضلعے میں تعمیرنو اور بحالی کے دعوے تو بہت کئے لیکن عملی طور پر کچھ نہیں کیا۔


کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں

Recent Posts Widget