1 جولائی، 2016

عمران خان نے چترالیوں کی توہین کی، صوبائی حکومت نے چترال کو یکثر نظر انداز کیا ہے۔ قوم 2018 میں تحریک انصاف سے بدلہ لے گی: مولانا عبدل اکبر

پشاور ( رپورٹ ابوالحسنین : ٹائمز آف چترال28 جون 2016 ) سابق ممبر قومی اسمبلی اور جماعت اسلامی کے مجلس شوریٰ کے ممبر مولانا عبدل اکبر چترالی نے عمران خان اس بیان پر شدید غم وغصے کا اظہار کیا ہے جس میں انہوں نے کہا تھا کہ چترال کے انفراسٹکچر کی بحالی کے لئے اسلام آباد میں ڈونر کانفرنس منعقد کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کے چیرمین اور ان کی صوبائی حکومت کے قول اور فغل میں تضادات ہیں۔ 

جمعرات کو پشاور پریس کلب میں ایک پریس کانفرنس میں انہوں نے کہا کہ گزشتہ سال کے سیلابوں نے بمبوریت، بروز، گرم چشمہ، تورکہو، شہ کوہ اور دیگر علاقوں میں انفراسٹرکچر کو تباہ کرکے رکھ دیا تھا، لوگ یہاں اذیت کی زندگی گزار رہے ہیں۔ ان مسائل کو خیبرپختونخواہ حکومت نے یکثر نظر انداز کردیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ سیلاب کی تباہ کاریوں کے بعد عمران خان کی صوبائی حکومت نے دعویٰ کیا تھا کہ ان کے پاس تمام وسائل موجود ہیں انہیں چترال میں بحالی کے کاموں کے لئے کسی ملک یا ڈونر ایجنسی سے مدد کی اپیل کی ضرور نہیں۔ وہ خود یہ کام کریں گے۔ 

لیکن اب تحریک انصاف کے چیرمین کو ڈونر کانفرنس بلانے کی ضرورت کیوں پیش آئی، وہ ایسا کرکے چترال کے عوام کی توہین کر رہے ہیں۔ چترال خیبرپختونخوا کا سب سے زیادہ متاثرہ ضلع ہے اس کے باوجود مالیاتی سال برائے 17-2016 میں اسے مکمل طور پر نظر انداز کردیا گیا جوکہ بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزی اور قابل مذمت ہے۔ 

انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخواہ کے وزیر اعلیٰ پرویز خٹک صوبے کے وسائل کو بے دریغ اپنے آبائی علاقوں نوشہرہ اور صوابی میں پھونک رہے ہیں، اب تک اپنے آبائی علاقوں میں 25 ارب روپے خرچ کرچکے ہیں۔ لیکن چترال کے قدرتی آفات سے تباہ شدہ انفراسٹکچرز کی بحالی کے لئے وہ ڈونر کانفرنس کرنے جارہے ہیں۔ 

مولانا اکبر نے چترال کے منتخب نمائندوں کو بھی آڑے ہاتھ لیا۔ انہوں نے کہا کہ مالیاتی سال 17-2016 میں چترال کو نظر انداز کرنا چترال کے منتخب ایم این ایز اور ایم پی ایز کی نااہلی اور ناکامی ہے۔ انہوں نے کہا چترالی قوم تحریک انصاف سے اس زیادتی کا بدلہ 2018 کے انتخابات میں لے گی اور تحریک انصاف کو مسترد کردیگی۔


کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں

Recent Posts Widget