20 جولائی، 2016

لوری ٹاپ روڈ 3 دن بعد ٹریفک کے لئے کھول دیا گیا، زیارت کے قریب سیلاب کی وجہ سے بند ہوگیا تھا

 



چترال ( نمائندہ ٹائمز آف چترال 20 جولائی 2016) جولائی 17 کو سیلاب کی وجہ سے بند ہونے والے روڈ کو ٹریفک کے لئے کھول دیا گیا۔ 17 جولائی کو لواری ٹنل کی دوسری جانب ، زیارت کے قریب باشوں کے بعد آنے والے سیلاب نے تباہی مچا دی تھی۔ سامبو کمپنی کی 7 گاڑیاں بھی سیلاب میں بہہ گئیں تھیں اور تعمیراتی میٹیریل ، جنریٹرز اور دیگر مشینیریوں کو بھی نقصان پہنچا تھا۔ سیلاب میں بہہ جانے والی متعدد گاڑیاں مکمل طور پر تباہ ہوگئیں تھیں، جن کے حصے زیارت سے لیکر عشیرت تک مختلف جگہوں پر سیلابی ریلے کے اندر پھنسی پڑی ہوئی ہیں۔

سڑک بند ہونے کی وجہ سے لواٹی ٹاپ کے دونوں جانب مسافر اور مال بردار گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگی ہوئی تھیں۔ چھٹیوں سے واپس جانے والے ملازمین، طلباء و طالبات، سیاح اور دیگر مسافر دونوں جانب پھنس کر رہ گئے تھے۔ شندور فیسٹیول کی تاریخوں میں کئی بار تبدیلی کی وجہ سے سیاح مایوس ہوگئے ہیں، کئی سیاح چھٹیاں ختم ہونے کی وجہ سے چترال سے واپس جارہے ہیں۔ کراچی میں رہائش پذیر متعدد مسافر اور طلباء بھی زیارت کے مقام پر پھنسے ہوئے تھے۔ تاہم 3 دن طویل انتظار کے بعد نیشنل ہائی وے نے روڈ کھول دیا ہے ، اور سڑک آج بروز منگل صبح ٹریفک کے لئے کھول دیاگیا ہے۔


کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں

Recent Posts Widget