اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

14 جولائی، 2016

پشاورکے مضافاتی علاقے میں ٹیکسی ڈرائیوں نے مرد مسافر کو جنسی درندگی کا نشانہ بنا ڈالا ، ملزم گرفتار

 

پشاور( ٹائمز آف چترال نیوز ڈیسک) پشاور کے علاقے پشتاخارا پولیس اسٹیشن کے حدود میں رنگ روڈ کے قریب ٹیکسی ڈرائیور نے نے مرد کو جنسی درندگی کا نشانہ بنا ڈالا۔ متاثرہ شخص نے پشتخارا پولیس اسٹیشن میں ملز م کے خلاف ایف آئی آر درج کرلیا ہے۔ متاثرہ شخص کا کہنا ہے کہ اس نے کارخانہ مارکیٹ کے لئے ٹیکسی بک کی تھی۔ ٹیکسی ڈرائیور نے رنگ روڑ پر ایک سی این جی اسٹیشن کے قریب ٹیکسی روکی اور اسے ٹیکسی سے زبردستی باہر نکالا اور قریب خالہ پلاٹ میں لے کر گیا اور اس کے ساتھ زنا کرڈالا۔ پولیس نے متاثرہ شخص کی مدعیت میں مقدمہ درج کرکے ملزم کے گھر پر چھاپہ مارا، جسے متاثرہ شخص نے پہچانا۔ ملزم کی شناخت منہاج کے نام سے ہوئی ملز کی عمر 40 سال اور لانڈی اخون کا رہائشی ہے۔

پولیس آفیشل نے بتایا یہ پولیس نے ملزم کو گرفتار کرلیا ہے اور متاثرہ شخص کو میڈیکل چیک اپ کےلئے بھیج دیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ متاثرہ شخص کاخانو مارکیٹ کا رہائشی ہے۔

مقامی انگریزی اخبار کے مطابق پولیس نے پی پی سی کے سیکشن 377 کے تحت ملزم کے خلاف مقدمہ درج کیا ہے اور مقاملے کی تحقیقات کررہی ہے، پولیس کے مطابق متاثرہ شخص کی عمر 20 سال ہے اور اس ملزم کے بارے میں پولیس مکمل تفصیلات فراہم کی تھی جس کی بناء پر ملز جلد گرفتار ہوگیا۔ پولیس نے بتایا کہ ابتدائی تفتیش میں متاثرہ شخص نے ملز کی شناخت کی ، اور ملزم نے جرم کا اعتراف کرلیا ہے۔


کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں