اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

19 اگست، 2016

پاکستان کے خلاف 50 آدمی جمع کرکے دکھائیں، براہمداغ بگٹی کو چیلنج دیتا ہوں

کوئٹہ (نیوز ڈسیک) بلوچستان کے وزیر اعلیٰ اور چیف آف جھالاوان نواب ثناء اللہ خان زہری نےاپنے حالیہ بیان میں کہا کہ کہ غریب خاندانوں کو فنڈنگ کرکے پاکستان کے خلاف استعمال کیارہا ہے، میں دعوے سے کہتا ہوں کہ بلوچستان میں کارروائیوں میں’را‘  ہی ملوث ہے۔


بلوچستان کے عوام بھارت اور بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کے بیان کے خلاف سراپا احتجاج ہیں۔ جمعرات کے روز لاء کالج میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ بلوچستان نے مزید کہا کہ کہ براہمداغ نے مودی کی تعریف کرکے ثابت کردیا کہ پاکستان میں اور خاص پر طور پر بلوچستان میں دہشت گردی میں بھارت اور کون کون ملوث ہیں، براہمداغ نے چند پیسوں کی خاطر مودی کو سلام پیش کیا، ہم اپنے شہیدوں کے ساتھ غداری نہیں کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ آزادی کا فریب دینے والوں نے بلوچستان میں خون کی ندیاں بہائیں ہیں، مودی کے ایجنٹوں کو عوام کی حمایت حاصل نہیں، 100 فیصد کشمیری حق خود ارادیت کے لیے احتجاج کررہے ہیں۔ بلوچستان بھارت کیخلاف سراپا احتجاج ہے، عوام حب الوطنی کی وجہ سے گھروں سے نکلے، براہمداغ کو چیلنج دیتا ہوں کہ پاکستان کے خلاف 50 آدمی جمع کرکے دکھائیں، دہشت گردوں کو بلوں سے نکال کر کیفر کردار تک پہنچائیں گے ، بھارت نے بلوچستان میں جو ضانہ جنگی شروع کر رکھی ہے اس میں فتح ہماری ہی ہوگی۔ نواب ثناء اللہ زہری نے کہا کہ بلوچستان کے وارث ہم ہیں ، ہمارے آباو اجداد نے مرضی سے پاکستان سے الحاق کیا،بہت سے مودی اور براہمداغ آئیں گے ، بلوچستان ہمیشہ پاکستان ساتھ رہے گا۔

کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں