اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

16 اگست، 2016

یار کو ہم نے جا بجا دیکھا -- کہیں ظاہر کہیں چھپا دیکھا

یار کو ہم نے جا بجا دیکھا -- کہیں ظاہر کہیں چھپا دیکھا
کہیں ممکن ہوا کہیں واجب -- کہیں فانی کہیں بقا دیکھا
دید اپنے کی تھی اسے خواہش -- آپ کو ہر طرح بنا دیکھا
صورتِ گُل میں کھل کھلا کے ہنسا -- شکل بلبل میں چہچہا دیکھا
شمع ہو کر کے اور پروانہ -- آپ کو آپ میں جلا دیکھا
کر کے دعویٰ کہیں انالحق کا -- بر سرِ دار وہ کھنچا دیکھا
تھا وہ برتر شما و ما سے نیاز-- پھر وہی اب شما و ما دیکھا
کہیں ہے بادشاہ تخت نشیں--  کہیں کاسہ لئے گدا دیکھا
کہیں عابد بنا کہیں زاہد -- کہیں رندوں کا پیشوا دیکھا
کہیں وہ در لباسِ معشوقاں --  بر سرِ ناز اور ادا دیکھا
کہیں عاشق نیاز کی صورت-- سینہ بریاں و دل جلا دیکھا

نیاز بریلوی

کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں