9 اگست، 2016

دودھ کی درآمد پر پینتالیس فیصد ٹیکس اور پیک دودھ کی قیمتوں میں دو بار اضافہ عوام پر ظلم ہے

 

اسلام آباد (نیوز ڈیسک)  اسلام آباد چیمبر آف سمال ٹریڈرز کے سرپرست شاہد رشید بٹ نے تھوڑے عرصہ میں ڈبوں میں فروخت ہونے والے دودھ کی قیمت میں دو بار کے اضافہ پر تشویش ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت اسکا نوٹس لے۔ دودھ کے ساتھ چینی کی قیمت میں بھی اضافہ ہوا ہے جو بلاجواز ہے۔ بجٹ میں ڈیری انڈسٹری پر اضافی ٹیکس لگانے سے یہ صنعت مزید مشکلات کا شکار ہو گئی ہے۔ 

شاہد رشید بٹ نے اسلام آباد ویمن چیمبر کی کمیٹی برائے ٹریڈ اینڈ انڈسٹری کی چئیرپرسن تنسم انوار سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ دودھ کی درامد پر اضافی ٹیکس کے سبب اسکی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ ہو رہا ہے جو عوام پر ظلم ہے۔ خشک دودھ پر بیس فیصد کسٹم ڈیوٹی اور پچیس فیصد ریگولیٹری ڈیوٹی نافذ کرنے سے اسکا استعمال کم ہو جائے گا جس سے صحت عامہ کے مسائل جنم لینگے جبکہ سب سے زیادہ اثر بچوں پر پڑے گا جن میں سے تقریباً نصف پہلے ہی غذا کی کمی کے سبب کمزور ہیں حکومت نے یہ فیصلہ دودھ کا کاروبار کرنے والے بڑے جاگیرداروں کو خوش کرنے کیلئے کیا ہے تاکہ الیکشن میں انکی حمایت حاصل کی جا سکے۔اس فیصلے کو یورپی یونین میں نا پسند کیا جا رہا ہے جس نے پاکستان کو جی ایس پی کی سہولت دے رکھی ہے جس سے تجارتی مراعات پر منفی اچر پڑ سکتا ہے۔ 

انھوں نے کہا کہ حکومتی اقدامات کی وجہ سے نہ صرف پاکستانی برامدات کو خطرات لاحق ہو گئے ہیں بلکہ اس شعبہ میں غیر ملکی سرمایہ کاری بھی رک سکتی ہے جو ملکی مفاد کے خلاف ہے۔قیمتیں بڑھنے سے مقامی اور درامد شدہ خشک دودھ کی مانگ تیس فیصد کم جائے گی جس سے محاصل ، اس شعبہ سے وابستہ چھ لاکھ افراد کے روزگاراور فوڈ سیکورٹی کی صورتحال پر اثر پڑے گا۔ پاکستان میں دودھ کی پیداوار55 ملین ٹن ہے جس میں سالانہ چار فیصد اور طلب میں پندرہ فیصد تک اضافہ ہو رہا ہے جسے پورا کرنے کیلئے مراعات کی ضرورت ہے نہ کہ اضافی ٹیکسوں کی۔ملک میں ساڑھے سات کروڑ سے زیادہ جانور ہیںجو اوسطاً چار سے پانچ لیٹر دودھ ریتے ہیں جبکہ ترقی یافتہ ممالک میں یہ شرح تیس سے چالیس لیٹر ہے۔دودھ کی عالمی طلب میں نو سال میں 36 فیصد اضافہ ہو گا جو پاکستان کیلئے ایک سنہری موقع ہے۔

کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں

Recent Posts Widget