اگست 10, 2016

پرویز مشرف نے #نوازشریف کو چیلنج کر دیا، کیا نواز شریف کو یہ چیلنج منظور ہوگا۔

 

لاہور( ٹی او سی ویب ڈیسک) پرویز مشرف نے ایک مقامی ٹی وی چینل میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میں وزیراعظم نواز شریف کو مناظرے کا چیلنج کرتا ہوں۔ وہ اسحاق ڈار سمیت اپنے ہمراہ 15 لوگ لے آئیں، میں اکیلا ہونگا اور اکیلا ان کا سامنا کروں گا انہیں ہر چیز کا جواب دوں گا۔ مشرف نے کہا کہ نیوٹرل پارلیمانی کمیشن تشکیل دیا جائےاور یہ نیوٹرل پارلیمانی کمیشن ہمارا اور آج کے دور کو دیکھے۔ نیوٹرل پارلیمانی کمیشن بیٹھے سب کو کٹہرے میں ڈال کر جواب لیا جائے۔ مشرف نے کہا کہ میں عدالتوں سے انصاف کی امید کرتا ہوں، جو مجھے ابھی تک نہیں ملا ہے۔ سب کو پتہ ہے کہ میرے خلاف سیاسی طور پر کیسز شروع کیے گئے ہیں۔ میرے کیسوں میں گواہی نہیں، سالوں سے کیس چل رہے ہیں۔ پندرہ دفعہ ہرعدالت میں پیش ہوا ہوں۔

سابق صدر پرویز مشرف ٹی وی پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاناما لیکس کا ایمانداری سے ٹرائل ہوا تو حکمران پھنس جائیں گے۔ میرے پاس جو کچھ ہے وہ الیکشن کمیشن کے گوشواروں میں لکھا ہوا ہے۔ میں 10 سال تک حکومت میں رہا۔ 2009ء سے پہلے کا کوئی اکاؤنٹ ثابت کیا جائے۔ میری کوئی آف شور کمپنی تھی نہ اب ہے۔ جنیوا میں بھی میرا کوئی اکاؤنٹ نہیں، اگر ہے تو لے لیا جائے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ جنرل راحیل شریف کو ابھی فوج کی کمانڈ سنبھالنی چاہیے۔ تاہم انھیں آرمی چیف رہنا ہے یا نہیں، یہ ان کا اپنا فیصلہ ہے۔ پرویز مشرف نے کہا کہ حکومت کو پتہ ہونا چاہیے کہ فوج کی فیلنگ کیا ہے۔ فوج سمجھتی ہے کہ میرے ساتھ زیادتی ہو رہی ہے۔ حکومت کو پتہ ہونا چاہیے۔ پریشر کون ڈال رہا تھا، یہ میں نہیں بتا سکتا۔ وقت آنے پر سب سامنے آجائے گا۔


کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں

Recent Posts Widget