17 دسمبر، 2016

معاملہ سوا 3 کروڑ کا: میرزا گل کی اکلوتی بچ جانے والی بیٹی 14 سالہ حسنیہ گل کے کئی وارث سامنے آگئے

 


کراچی/چترال (ٹائمز آف چترال مانیٹرنگ ڈیسک) چترال گرم چشمہ سے تعلق رکھنے والے میرزا گل چچا طیارے حادثے میں اپنے تمام اہل خانہ کے ہمراہ دار فانی سے کوچ کرگئے تھے۔ گل چچا کی ایک ہی 14 سال بیٹی حسنہ بی بی معجزانہ طور پر بچ گئی تھی۔ 14 سالہ حسینہ گل کو امدادی معاوضے اور انشورنس کی مد میں سوا 3 کروڑ روپے ملنے والے ہیں، جوں ہی یہ بات سامنے آگئی کہ حسنہ گل کو اتنی بڑی رقم ملنے والی ہے حسینہ گل کے کئی وارث سامنے آگئے ہیں جن میں حسینہ کی پرورش کے حوالے سے کھینچا تانی شروع ہوچکی ہے۔ جبکہ حسنہ گل کی خواہش ہے کہ وہ اپنی تعلیم جاری رکھے گی اور حادثے والے دن بھی وہ تعلیم کی وجہ سے والدین کے ساتھ اسلام آباد سفر کرنے سے گریز کیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق طیارے کے حادثے میں چترال کے ایک خاندان کے 6 افراد جاں بحق ہوگئے۔ جن میں میرزگل چاچا ان کی اہلیہ اور 4 بچے شامل تھے۔ جس دن یہ لوگ اسلام آباد کے لئے رحت سفر باندھ رہے تھے حسینہ اپنی تعلیم کی وجہ سے پیچھے رہ گئی تھی کیوںکہ حسینہ گل کے امتحانات جاری تھے اس لیے وہ خاندان کے ساتھ سفر نہیں کیا تھا، حادثے نے حسینہ گل کی نفسیات کو تھس نس کرکے رکھ دیا تھا اور مستقل کے حوالے سے کئی سوالات حسینہ کے ذہن میں گردش کر رہے تھے، حسینہ کچھ ذہنی دبائو اور مسائل کی وجہ سے پمز میں زیر علاج ہے۔ حسینہ کو یہ علم بھی نہ تھا کہ انہیں اتنی بڑی رقم ملے گی۔ جوں ہی یہ خبر عالم ہوگئی کہ حسینہ گل کو خاندان کے 6 افراد کی ہلاکت پرانشورنس اور معاوضے کی صورت میں 3 کروڑ 30 لاکھ روپے ملنے والے ہیں۔ خبر سامنے آتے ہی حسینہ کے کئی رشتے دار سامنے آ گئے ہیں جن کا کہنا ہے کہ حسینہ گل ہمارے ساتھ رہے گی، خاندانی ذرائع کے مطابق حسینہ گل کے پھوپھی اور چچا بھی اسے ساتھ لے جانے پمز اسپتال پہنچ گئے ہیں، پھوپھی حسینہ گل کی شادی اپنے بیٹے کے ساتھ کرانا چاہتی ہے۔ 

حسینہ گل کا کہنا ہے کہ ’’میں ابھی پڑھنا چاہتی ہوں، حکومت میری مدد کرے، چترال واپس گئی تو مجھے پڑھنے نہیں دیا جائے گا۔‘‘

پی آئی اے کے ترجمان دانیال گیلانی کے مطابق طیارے حادثے میں جان بحق افراد کے لواحقین کو ابتدائی طور پر 5 لاکھ روپے فی کس دیے جا رہے ہیں، 5 لاکھ روپے کی یہ ابتدائی رقم تدفین کیلیے دی جا رہی ہے۔ چترال گرم چشمہ کی کم سن لڑکی حسینہ گل کے والدین سمیت خاندان کے 6 افراد جاں بحق ہوئے تھے اس لیے وہ جاں بحق 6 افراد کی واحد وارث بچی ہے۔ 

گائوں کے متعدد خاندان حسینہ گل کے رشتے دار ہونے کے دعوے دار بن کر سامنے آئے ہیں، اس بناء پر تاحال معاوضے کی رقم ادا نہیں کی جاسکی ہے۔ دانیال گیلانی نے مزید بتایا کہ معاوضے کی رقم اصل وارث تک پہنچانے کیلیے تمام ضروری اقدامات کیے جارہے رہے ہیں، معاملے کی تحقیقات اور سچ جاننے کے لیے ٹیم تحقیاتی ٹیم چترال بھجوائی جائے گی تاکہ حقیقی وارث کا پتہ چلایا جاسکے۔

کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں

Recent Posts Widget