16 دسمبر، 2016

عالمی ریکارڈ بنانے کی خواہاں امریکی خاتون کیسینڈرا ڈی پیکول کی پاکستان آمد، کراچی کے مختلف علاقوں اورمزار قائد کا دورہ

عالمی ریکارڈ بنانے کی خواہاں امریکی خاتون کی پاکستان آمد
مزار قائد کا دورہ ، میئر کراچی سے ملاقات کے بعد درختوں کی شجرکاری کی تقریب میں شرکت ، 196 ممالک کا انتہائی تیزرفتاری کے ساتھ سفر کرنے والی دنیا کی پہلی خاتون ہوں گی


امریکی خاتون کیسینڈرا ڈی پیکول 196 ممالک کے متاثرکن سفر کے ذریعے گینز ورلڈ ریکارڈ قائم کرنے کے سلسلے میں پانچ روزہ دورے پر پاکستان پہنچ گئی ہیں جن کی میزبانی پیسفک ایشیاءٹریول ایسوسی ایشن (پاٹا) کے پاکستان چیپٹر کی جانب سے کی جارہی ہے۔ وہ 196 خودمختار ممالک کا انتہائی تیزرفتاری کے ساتھ سفر کرنے والی دنیا کی پہلی خاتون ہوں گی جن کا تعلق واشنگٹن کے علاقے کنیکٹی کٹ سے ہے جہاں سے انہوں نے گزشتہ سال جولائی میں سفر کا آغاز کیا اور اس مہینے کے اختتام تک وہ اپنا مشن مکمل کرلیں گی۔ کیسنڈرا ڈی پیکول انٹرنیشنل انسٹی ٹیوٹ آف پیس تھرو ٹورزم اینڈ اسکال انٹرنیشنل کی جانب سے امن کی سفیر ہیں۔ ان کے دورے کا ایک مقصد یونیورسٹی ٹورزم کے طالب علموں سے ملاقات کرکے ذمہ دارانہ صحافت اور معاشیات پر اظہار خیال کرنا ہے۔ 


رواں سال کے اوائل میں وہ یہاں خطے میں افغانستان، بنگلہ دیش، بھارت، نیپال اور سری لنکا کا دورہ کرچکی ہیں۔ لیکن پاٹا اور اسکے چیئرمین اکبر اے شریف کی ذاتی کاوشوں بشمول ویزا وغیرہ کے معاملات نمٹانے کی بدولت ان کا کراچی، لاہور اور اسلام آباد کا دورہ ممکن ہوپایا ہے۔ 

کیسنڈرا پاکستان میں 13 دسمبر سے 17 تک قیام کریں گی جس میں وہ پاکستان کی صف اول کی یونیورسٹیوں جیسے بی این یو (لاہور) اور کامسیٹس (اسلام آباد) میں نوجوانوں سے ملاقات کریں گی۔ وہ متعلقہ ٹورزم ڈیولپمنٹ کارپوریشنز کے تعاون سے کراچی اور لاہور میں خوبصورت مقامات کے نظارے بھی کریں گی ۔ پاکستان میں کیسنڈرا کے پروگرام میں پاٹا
پاکستان چیپٹر کے ساتھ ملک کی صف اول کی تعلقات عامہ کی ادارے ایشیاٹک پبلک ریلیشنز نیٹ ورک کی جانب سے تعاون کیا جارہا ہے جس میں تعلیمی اداروں میں ان کے اظہار خیال، میڈیا کے ساتھ بات چیت کے علاوہ لاہور اور اسلام آباد میں بلاگرز اور سوشل میڈیا پر سرگرم افراد کو مدعو کیا جائے گا۔ 

پاکستان میں اپنے دورے کے دوران انہوں نے کراچی میں آئی بی اے (کراچی) میں نوجوانوں سے ملاقات کی ، اس کے علاوہ انہوں نے روٹری کلب پاکستان کا دورہ کیا جبکہ انہوں نے کراچی میں بلاگرز اور میڈیا کے نمائندوں سے بھی بات چیت کی اور اپنے دلچسپ سفر کے بارے میں تفصیلات بتائیں۔ انہوں نے کراچی میں مزار قائد کا دورہ کیا ۔ اس کے علاوہ انہوں نے میئر کراچی وسیم اختر سے بھی ملاقات کی اور ان کے ہمراہ وہ درختوں کی شجرکاری کی تقریب میں بھی شریک ہوئیں۔ 

ان تقریبات میں سب سے اہم پاٹا پاکستان چیپٹر کی جانب سے استقبالیہ تقریب ہے جس میں پاکستانی ٹورزم انڈسٹری اور ایڈمنسٹریشن کے تمام شعبہ جات شریک ہوں گے۔ 

پاٹا پاکستان چیپٹر بین الاقوامی ٹورزم کا واحد ادارہ ہے جو 1982 میں قائم ہوا اور اپنے اراکین و اسٹیک ہولڈرز کو مختلف اقسام کی متاثرکن خدمات فراہم کرتا ہے ۔ 1993 میں پاٹا کے پاکستان چیپٹر نے بہترین کارکردگی کا ایوارڈ حاصل کیا۔ یہ ادارہ وفاقی سطح پر ٹورزم کی انتظامیہ کی عملی مشاورت فراہم کرتا ہے اور مشکل وقت کا بلاخوف سامنا کرکے ذمہ دارانہ سیاحت کے لئے کام کرتا ہے۔ اس کے موجودہ چیئرمین لیفٹنٹ (ر) اکبر اے شریف ہیں جو پاٹا انڈسٹری کونسل کے رکن بھی ہیں۔ 

کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں

Recent Posts Widget