3 دسمبر، 2016

چترال میں جنگلات کی بے دریغ کٹائی کے خلاف احتجاج

 

چترال (نیوز ڈیسک) پشاور میں چترال میں جنگلات کی غیر قانونی اور بے دریغ کٹائی کے خلاف اختجاجی مظاہری کیا گیا۔ اختجاج میں تحریک انصاف کی حکومت سے اس اہم مسئلے کی جانب توجہ دینے اور اس کا سختی سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا گیا۔ ایسے نہ کرنے کی صورت میں صوبے بھر میں اختجاجی مظاہرے کئے جائیں گے۔  مظاہرین شیرشاہ سوری روڈ پر جمع ہوگئے تھے اور مختلف بینر اٹھائے ہوئے تھے، بینر میں مطالبات درج تھے۔ 

جماعت اسلامی چترال کے مرکزی لیڈر اور سابق ممبر قومی اسمبلی  مولانا عبدالکبر چترالی اختجاجی مظاہری کی سربراہی کررہے تھے۔ مظاہرین نے میڈیا نمائندوں کو بتایا کہ تحریک انصاف کی حکومت میں چترال کے جنگلات کی بے دریغ اور بے رحمانہ کٹائی ہورہی ہے جسے فوری طور پر بند ہوجانا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت کے نمائندے ایک منظم سازش کے تحت چترال کے جنگلات کی بے دریغ کٹائی شروع کر رکھی۔ انہوں نے مزید کہا کہ صوبائی حکومت 'انڈس کوہستان پالیسی' چترال میں لاگو کررہی ہے جس کے تحت چترال تحصیل  دروش اور  تحصیل چترال میں جنگلات کی بے رحمانہ کٹائو کروارہی ہے۔


کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں

Recent Posts Widget