جنوری 11, 2017

لواری ٹنل پر 85 فیصد کام مکمل ہوگیا، باقی کام جون 2017 تک مکمل کرکے آمدورفت کے لئے کھول دیا جائے گا

اسلام آباد (افسر خان : ٹائمز آف چترال ) لواری ٹنل پر 85 فیصد کام مکمل ہوگیا ہے باقی کام جون 2017 تک مکمل کر دیا جائے گا جس کے بعد توقع کی جاتی ہے کہ جون 2017 سے ٹنل باقاعدہ طور پر ٹریفک کے لئے کھول دیا جائے گا۔

نیشنل اسمبلی کی سٹینڈنگ کمیٹی برائے پلاننگ اور ڈیولپمنٹ کو دی گئی بریفینگ میں بتا یا گیا ہےکہ لواری ٹنل پر 85 فیصد کام مکمل ہوگیا ہے اور باقی کام جون 2017 تک مکمل کرلیا جائے گا جس کے بعد جون میں اُسے آمدروفت کے لئے کھول دیا جائے گا۔

منگل کے روز پارلیمنٹ ہائوس میں ہونے والی کمیٹی کی میٹنگ ہوئی جس کی صدارت عبدلماجد خان خانان خیل کررہے تھے ۔ کمیٹی نے لواری ٹنل سے متعلق دیگر منصوبوں ، راولپنڈی گرین لائن بس ٹرانزٹ سسٹم وغیرہ پر گفتگو کی۔

اس موقع پر نیشنل ہائی اتھارٹی کے اہلکار نےلواری ٹنل پر بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ وزیر اعظم نواز شریف کی ہدایت پرلواری ٹنل پر کام تیز کر دیا گیا ہے ، انہوں نے کہا کہ اب منصوبہ اس کی تکمیل کی تاریخ سے 9 ماہ قبل ہی مکمل کرلیا جائے گا، اور جون 2017 تک مکمل کرکے آمدورفت کے لئے کھول دیا جائے گا۔

وزارت مواصلات کے اہلکار نے کمیٹی کو بتایا کہ پبلک سیکٹر ڈیولپمنٹ پروگرام 17-2016 کے تحت چترال، ایون اور بمبوریت کی سڑکوں کو کشادہ کرنے کے لئے 140 ملین روپے دے دیئے گئے ہیں جس کی ہداہت وزیر اعظم میاں نوازشریف نے کی تھی۔

کمیٹی کی میٹنگ میں چترال کے ممبر نیشنل اسمبلی شہزادہ افتخار الدین بھی موجود تھے۔


لواری ٹاپ پر پھسلن کے باعث مال بردار گاڑیاں آہستہ آہستہ منزل کی جانب گامزن


لواری ٹاپ پر شدید برف باری کے بعد سڑک سے برف ہٹایا جارہا ہے 




لواری ٹاپ بند ہونے کی وجہ سے روڑ پر کھڑی مسافر گاڑی برف سے ڈھک چکی ہے۔

کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں

Recent Posts Widget