فروری 16, 2017

عجوبہ: اس گاوں کی خواتین آزادی کے بعد آج پہلی بار ووٹ ڈالنے نکلیں

 

(ویب ڈیسک) بھارتی ریاست اتر پردیش میں ایک ایسا بھی گاؤں ہے، جہاں آزادی کے بعد سے خواتین نے ووٹ ہی نہیں ڈالا۔ اس کی یہ وجہ ہرگز نہ تھی ان کا نام ووٹر لسٹ میں نہیں ہے یا ان کا ووٹر کارڈ ہی نہیں بن سکا ہے۔ دراصل مرد پردھان سماج کی دادا گیری کی وجہ سے ان خواتین کو اب تک ووٹ ڈالنے سے محروم رکھا گیا تھا۔ لیکن بدھ کو آخر کار اس گاؤں کی خواتین نے سماجی بیڑیاں توڑیں اور پہلی بار ووٹ دیا۔

یوپی کے لکھیم پور کھیری ضلع کے سہرواں گاؤں میں ووٹ کی لائن میں لگیں یہ خواتین عام نہیں ہیں بلکہ ان خواتین نے بدھ کو برسوں پرانی روایت کو توڑڈالا ہے۔ گھر کی دہلیز سے نکل کر پہلی بار یہ پولنگ بوتھ تک پہنچی ہیں۔ اس سے قبل اس گاؤں کی خواتین نے آج تک پولیس اسٹیشن یا پولنگ بوتھ کا منہ نہیں دیکھا تھا۔ انہیں اب تک یہ پتہ ہی نہیں تھا کہ ای وی ایم کیا ہوتا ہے۔ 

اب برسوں بعد گاؤں کے مردوں کی طرف سے باندھی گئیں بیڑیاں توڑ کر انہوں نے ووٹ دیا۔ ووٹ ڈالنے کے بعد پولنگ بوتھ کے باہر كھڑی رخسانہ کہتی ہیں کہ ہمیں کافی خوشی ہے۔ وہیں ریحانہ کہتی ہیں لگتا جیسے ہمارے پنکھ ہی لگ گئے ہوں۔


کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں

Recent Posts Widget