اپریل 6, 2017

خوشحاب اور شیخورہ کے مرد و خاتون نے 11 ویں سٹی پی پی اے مائیکرو انٹریپرینیورشپ ایوارڈز جیت لئے

 



اسلام آباد:  پاکستان پاورٹی ایلیویئیشن فنڈ (پی پی اے ایف) اور سٹی فا ¶نڈیشن کی شراکت داری سے 11واں سٹی۔ پی پی اے ایف مائیکروانٹریپرینیورشپ ایوارڈز (سی ایم اے) کا انعقاد ہوا جس میں قومی سطح پر دو پاکستانیوں نے سی ایم اے ایوارڈز جیت لئے۔ محمد بشیر اور ذکیہ بی بی نے مالی وسائل فراہم کرنے والے دو ذمہ دار اداروں سے بالترتیب سون ویلی ڈیولپمنٹ پروگرام اور رورل کمیونٹی ڈیولپمنٹ سوسائٹی سے چھوٹے قرضے لئے جس کی بدولت وہ ایوارڈز لینے والوں کی فہرست میں شامل ہوئے۔

نیشنل سی ایم اے مائیکرو انٹریپرینیورشپ ایوارڈ برائے مرد جیتنے والے محمد بشیر نے اسکریپ کی خرید و فروخت کا کام کیا۔ بشیر کے کاروبار کی طلب میں اضافہ دیکھا گیا جو فی الوقت پنجاب کے ضلع خوشاب میں کام کررہے ہیں اور ان کی خواہش ہے کہ ان کا کاروبار ترقی کرے۔ محمد بشیر دور دراز علاقے میں رہنے کے باوجود مقامی معیشت میں تعاون کرتے ہیں اور ان کے پاس 28 افراد برسرروزگار ہیں۔ 

خواتین میں پنجاب کے ضلع شیخوپورہ سے تعلق رکھنے والی ذکیہ بی بی نے ایوارڈ حاصل کیا ہے جو ربر کے آٹو اسپیئر پارٹس تیار کرتی ہیں۔ ان کے کاروبار میں 16 افراد کا عملہ ہے اور انہوں نے بڑی حد تک مقامی طور پر سپلائی چین قائم کرلی ہے۔ 

سٹی۔ پی پی اے ایف مائیکروانٹریپرینیورشپ ایوارڈز میں شامل ہونے کے لئے ضروری ہے کہ کسی بھی کاروبار کو لازمی طور پر ذمہ دار مالیاتی خدمات فراہم کرنے والے ادارے کے قرضے سے فائدہ پہنچا ہو اور اپنے علاقے، صوبے یا شہر کی مقامی سطح پر معاشی ترقی کے لئے کام کیا ہو۔ 
دیگر ایوارڈز جیتنے والوں میں مظفر گڑھ کی شمشاد فاطمہ ہیں جنہوں نے انتہائی جدت، نارووال سے محمد عامر نے مشکل حالات پر قابو پانے اور لاہور سے حنا مصطفیٰ نے کمیونٹی پر مثبت اثرات کی کیٹیگری میں ایوارڈز حاصل کئے۔

ینگ انٹریپرینیور ایوارڈ 19 سالہ محمد ظفر نے حاصل کیا۔ محمد ظفر نے اپنی باقاعدہ آمدن اور خاندان کا ہاتھ بٹانے کے لئے آٹو رکشا خریدا۔

 اس موقع پر پی پی اے ایف کے سی ای او قاضی عظمت عیسیٰ نے کہا، "گزشتہ 11 سالوں میں پی پی اے ایف 400 سے زائد چھوٹے کاروباری افراد کی حوصلہ افزائی کی جو اپنی زندگیوں میں تبدیلی لائے اور اس کے اثرات ان کے علاقے پر بھی پڑے جو قابل ذکر ہے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ انہوں نے معاشی طور پر تعاون جاری رکھا، روزگار پیدا کئے اور سب سے اہم بات یہ ہے کہ وہ اپنے ارد گرد موجود لوگوں میں مثالی کردار بن گئے۔ یہ وہ لوگ ہیں جو عام طور پر روایتی مالی خدمات سے محروم رہ جاتے ہیں لیکن انہوں نے مائیکرو فنانس کے ذریعے اپنے خوابوں کی تکمیل کے راستے تلاش کرلئے ہیں۔ "

سٹی کنٹری آفیسر اور منیجنگ ڈائریکٹر سٹی پاکستان نعیم لودھی نے بتایا، "پاکستان میں سٹی۔ پی پی اے ایف مائیکروانٹروپرینیورشپ ایوارڈز کے انعقاد کا 11 واں 
سال ہے اور اس ایوارڈ میں شمولیت کے لئے وسیع اقسام کا اندراج ذمہ دار مالیاتی سیکٹر میں جاری ارتقا کا ثبوت ہے۔ یہ وہ انڈسٹری ہے جو اب ملک بھر میں معاشرے کے بڑے حصے کو خدمات پیش کرتی ہے۔ چاہے اسلام آباد ہو یا دیہی بلوچستان ہو ،یہ انتہائی متاثرکن ہے کہ کس طرح سے لوگ انفرادی سطح اور ادارے اپنے کاروباری ماڈلز میں علاقے کے لوگوں کو دل سے شامل کررہے ہیں تاکہ ان کے بڑے کاروباری کلائنٹس ملازمتیں پیدا کرسکیں اور مزید معاشی مواقع میں تعاون کیا جاسکے۔ اس ایوارڈ کے لئے منتخب ہونے والے اور ایوارڈز جیتنے والے تمام افراد مبارک باد کے مستحق ہیں۔ "

پی پی اے ایف کا تعارف 
پی پی اے ایف ایک صف اول کا اعلیٰ ادارہ ہے جو کمیونٹی کی جانب سے چلائی جانیوالی مائیکرو کریڈٹ میں ترقی، گزر اوقات، دوبارہ قابل استعمال توانائی، پانی اور انفراسٹرکچر، قحط میں کمی، تعلیم، صحت، معذوری، مہارت میں بہتری اور تربیت، سماجی و ماحولیاتی تحفظ اور ایمرجنسی حالات میں عمل کام کرتا ہے۔ اس کی رسائی پاکستان بھر میں موجود ہے جبکہ اسکی 130 تنظیموں کے ساتھ 99 ہزار سے زائد گا ¶ں/آبادکاریوں کی شراکت داری ہے جبکہ ان کے ہمراہ ایک لاکھ 25 ہزار سے زائد کمیونٹی ادارے اور نچلی سطح پر چار لاکھ 14 ہزار کریڈٹ/کامن انٹرسٹ گروپس ہیں۔ پی پی اے ایف کی مجموعی آپریشنل سرگرمیاں 71 ملین مائیکروکریڈٹ قرضوں پر پھیلی ہوئی ہیں جس کے ساتھ 59 فیصد قرضہ خواتین کو دیا گیا ہے جبکہ دیہی علاقوں تک 80 فیصد مالی رسائی (جہاں 100 فیصد ریکوری شرح کی وصولی کے ساتھ)فراہم کی جاچکی ہے۔ اضافی طور پر اسکے تعلیم، صحت، پانی اور انفراسٹرکچر کے 33 ہزار منصوبے مکمل کئے جاچکے ہیں اور 9 لاکھ 18 ہزار افراد (51 فیصد خواتین) کی مہارت میں ترقی اور انتظامی تربیت کے حوالے سے 17 ہزار تقریبات منعقد کی جاچکی ہیں۔ پی پی اے ایف نے 63 ہزار انتہائی غریب ترین افراد (47 فیصد خواتین) کو پیداواری اثاثے (Productive Assets) بھی فراہم کئے ہیں۔ 

کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں

Recent Posts Widget