اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

19 اپریل، 2017

موسم بہار کی آمد پر چترال یوتھ فورم کی جانب سے اسلام آباد میں ”سپرنگ فیسٹیول “ کا انعقاد

 



اسلام آباد (رپورٹ نظار علی) چترال ےوتھ فورم نے بروز اتوار 16 اپریل کو پاکستان نےشنل کونسل آف ارٹس مےں اےک پروگرام ”سپرنگ فیسٹیول “ (Spring Festival) کا انعقاد کیا ۔جس کا مقصد موسم بہار کی آمد کو چترال کے صدیوں پرانی ثقافتی و روایتی طرز میں منانا تھا ۔تقریب میں چترال سے ممبر قومی اسمبلی شہزادہ افتحار الدین اور چترال ٹاون کے مینجینگ ڈائریکٹر سلطان والی نے خصوصی طور پر شرکت کی۔ اس پروگرام میں راولپنڈی اور اسلام آباد میں بسنے والے گلگت بلتستان اور چترال کے سینئر ز، پروفیشنلز او ر فیملیز کے علاوہ مختلف علاقوںسے مہمانوں نے بھی کثیر تعداد میں شرکت کی۔

 ایم این اے چترال شہزادہ افتحارالدین نے پروگرام کو سراہتے ہوئے کہا ۔ ” یہ پروگرام اپنی نوعےت کا ایک منفرد پروگرام تھا۔ یہ فیسٹیول ہر سال ہونا چاہیے اور میں کوشش کرونگا کہ پی این سی اے اس کو اپنے سالانہ کیلنڈر میں ڈال دے تاکہ ہم ہر سال اپنے روایتی جشن کو اس طرح مناتے رہیں گے۔ “ 

اگرچہ موسم بہارکو پھولوں کے مہینے کے طور پر پوری دنیا میں جانا جاتا ہے ، اس موسم کا جشن مختلف ملکوں اور پاکستان کے کئی علاقوںمیں منایا جاتا ہے لیکن چترال یوتھ فورم نے اس کو ایک منفرد انداز میںمنایا۔ اس پروگرام میں جشن بہاران کو مختلف معاشروں کےا فراد نے اپنے اپنے ثقافتی انداز مختلف ٹبلوس کی شکل میں پیش کی جس میںچھوٹے چھوٹے بچوں نے پرفارم کیا ۔ اور انہوں نے ایران، افعانستان، تاجکسان، چترال اور گلگت بلتستان کی ثقافت کو نہاےت اچھے انداز میں پیش کیا جس کو شراکاءنے دل کھول کر داد دی۔ اور اس کے ساتھ ساتھ نوجوانون نے چترال کی قدیم ترین روایتی موسیقی اور رقص ” پھستک دوسک “ بھی پیش کیا جو اپنے منفرد انداز کی بناءپر چترال میں بہت مقبول ہے۔ 

 فیسٹےول کا دوسرا حصہ ثقافتی میوزک کا تھا جس میں چترال اور گلگت بلتستان کے مایہ نازفنکارون نے اپنے فن کا مظاہرہ کیا۔ چترال کی طرف سے محسن حیات شاداب اور عرفان علی تاج اور گلگت بلتستان سے جابر خان جابر نے اپنے فن سے لوگوں کومحظوظ کیا۔ پروگرام کے شراکاءنے بہ یک وقت قدیم اور جدید میوزک میں رقص کرکے محفل گرما دی۔ 


کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں