اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

27 جولائی، 2017

کریم آباد میں حالات کی خرابی کی تمامتر ذمہ داری شہزادہ حیدرالملک پر عائد ہوگی۔ محمد شریف خان سابق صدر یوتھ ونگ

کریم آباد (نمائندہ ٹائمز آف چترال) آج شہزادہ حیدارالملک نے جب اپنے مال مویشیوں کو لیکر غیرقانونی طور پر کریم اباد کے علاقے میں داخل ہونے کی اور عوامی چراہ گاہ پر غیر قانونی قبضے کی کوشش کی تو علاقے کے عوام نے ان کا راستہ روکا جس پر اس نے جھوٹے اور من گھڑت الزامات لگا کر علاقے کے انتہائی شریف اور معزز عوامی نمائندوں جن میں علاقے کے ڈسٹرکٹ کونسل کے ممبر محمد یعقوب، PTI چترال کے رہنما اسرارالدین صبور، سابق ڈسٹرکٹ نائب ناظم سلطان شاہ، VC ناظم علی مراد سمیت 21 معزز عام لوکل نمائندے بھی شامل ہیں کے خلاف جھوٹے FIR کٹوائے جس پر انہیں گرفتار کیا گیا ہے۔ میں کریم اباد کے رہائشی کی حیثیت اہلیان کریم آباد کی طرف سے حکومت وقت سے مطالبہ کرتا ہوں کہ ہمارے بیگناہ معزز عوامی نمائندوں پر بنائے گئے جھوٹے FIR ختم کرکے انہیں فی الفور رہا کیا جائے واضح رہے کہ کریم آباد چراگاہ میں سیلاب سے بچنے کے لئے احتیاطی تدابیر کو مد نظر رکھ کر مال مویشی چھوڑنے یا وہاں مویشی رکھنے پر پابندی ہے لیکن شہزادہ حیدرالملک اثر رسوخ استعمال کرکے چراگاہ پر قبضہ کرنے کی کوشش کر رہے ہیں محمد شریف خان کا مزید کہنا تھا کہ علاقے کےمعززین تاحال تھانے میں ہیں اور اطلاعات ہیں کہ کل انہیں جیل بھیج دیا جائے گا اگر ایسا ہوا تو وادی میں حالات سنگین سے سنگین تر ہونے خدشہ ہے اور حالات خراب ہونے کی تمام تر ذمہ داری شہزاذہ حیدرالملک پر عائد ہوگی۔


فائل فوٹو

کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں