25 جولائی، 2017

لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں میڈیکل ٹیکنشن کی مریضہ سے زیادتی، ہسپتال میں ہنگامہ، واقعہ کی تحقیقات کرنیکا فیصلہ

 

لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں میڈیکل ٹیکنشن کی مریضہ سے زیادتی، ہسپتال میں ہنگامہ، واقعہ کی تحقیقات کرنیکا فیصلہ

پشاور(مانیٹرنگ ڈیسک: ٹائمز آف چترال ) لیڈی ریڈنگ ہسپتال (ایل آرایچ) میں ایک میڈیکل ٹیکنشن کی جانب سے مریضہ کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا ہے۔  ہسپتال انتظامیہ نے مذکورہ شخص کو گرفتار کرکے واقعے کی انکوائری کے لئے ٹیم تشکیل دے دی ہے ۔ تفصیلات کے مطابق ایک مریضہ کو انتہائی  نازک حالت میں بٹ خیلہ سے ایل آر ایچ لایا گیا تھا ۔ ابتدائی معائنے کے بعد ڈاکٹروں نے کمپیوٹرائز  ٹیموگرافی یعنی سی ٹی سکین کا مشورہ دیا ، جس کے بعد مریضہ کو ریڈیالوجی روم لے جایا گیا ،  جیسا کہ عام طور پر ہوتا ہے کہ ریڈیشن افیکٹ کی وجہ سے مریض کے علاوہ کسی کو اندر جانے نہیں دیتے ، یہاں بھی ایسا ہی ہوا۔ مریضہ کے رشتہ داروں کو باہر انتظار کے لئے کہا گیا۔ 

سی ٹی سکین کے دوران مریض کے رشتہ داروں نے  شکایت کی کہ سی ٹی سکین ٹیکنشن نے مریضہ  سے بد سلوکی کی ۔  مریضہ کے گھر والوں کے مطابق  مریضہ  کی چلانے کی آواز سن کر وہ  ریڈیالوجی روم کے اندر گئے  اور انہوں نے غیر اخلاقی طور پر  ٹیکنشن کو مریضہ کو چھوتے ہوئے دیکھ لیا۔ تاہم  یہ بھی کہا جاتا ہے کہ یہ محض الزام ہے کیونکہ مریضہ کی حالت ایسی نہ تھی  کہ وہ بول پائے۔ یہ محض شک کی بنیاد پر مریضہ کے عزیزوں نے الزام لگایا ہے۔ 
تاہم پاکستان پینل کوڈ 354 اور 509 کے تحت مذکورہ ٹیکنشن کے خلاف خان رزاق پولیس اسٹیشن ، قصہ خوانی میں ایف آئی آر  درج کیا گیا ہے۔
انتظامیہ نے ہسپتال میں ٹیکنشن کیجانب سےمریضہ کومبینہ طور پرزیادتی کا نشانہ بنانے کے واقعہ کی تحقیقات کیلئے کمیٹی بنانے کا فیصلہ کیا ہے، کمیٹی کی جانب سے واقعہ کے حوالے سےانکوائری کی جائے گی جس کےبعد کمیٹی حقائق سامنے لانے کیساتھ ساتھ سفارشات انتظامیہ کو پیش کرے گی، واضح رہےکہ اتوار کے روز ایل آرایچ میں علاج کیلئے آنے والی خاتون مریضہ کو ایکسرے کے دوران عزت خان نامی ٹیکنیشن نے مبینہ طور پر زیاتی کا نشانہ بنانے کی کوشش کی تاہم مریضہ اور انکے لواحقین کیجانب سے ہنگامہ آرائی کے بعد ملزم کو گرفتار کرلیا گیا،جس کے بعد ہسپتال انتظامیہ نے بھی اندرونی طور پر انکوائری کیلئے کمیٹی تشکیل دینے کا فیصلہ کیا ہے تاکہ واقعہ کے حقائق سامنے آسکیں۔

کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں

Recent Posts Widget