4 ستمبر، 2017

برما : مسلمان بچوں کے سر کاٹ دیئے گئے اور گھروں میں زندہ جلادیئے گئے: ظلم و بربریت جاری عالمی ادارے اور مسلم ممالک خاموش

 

برما (ٹائمز آف چترال نیوز ڈیسک) روہنگیا مسلمانوں پر میانمار کی زمین تنگ کئے جانے کے بعد بنگلہ دیش اور بھارت ہجرت کر رہے ہیں۔  غیر ملکی خبر رساں ادارے نے عینی شاہدین کے حوالے سے بتایا ہے کہ روہنگیا مسلمان
سیکڑوں بچوں کو ان کی ماؤوں سامنے سر تنوں سے جدا کردیئے گئے اور کئی شہریوں کو زندہ جلا دیا گیا ہے۔ برما کی فوج اور پیرا ملٹری فورسز کی جانب سے مسلم اقلیتوں کے خلاف ظلم و بربریت کی حد کردی گئی ہے۔2600 سے زائد گھر جلا دیئے گئے۔ 60 ہزار سے زائد روہنگیا مسلمان مغربی سرحد سے بنگلہ دیش ہجرت کر گئے ہیں۔


برطانوی فارن سیکرییٹری  بورس جانسن نے فوری طور پر مسلمانوں کے خلاف ظلم و بربریت روکنے کی اپیل کی ہے۔ انہوں کے برما کی لیڈر سن سو کی سے فوری طور پر ایکشن لینے کا مطالبہ کیا ہے۔  

ترکش صدر طیب اردگان نے برما کے فوج کی مسلمانوں کے اجتماعی قتل عام کی  سخت مذمت کی ہے۔ 

مبصرین نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ مہاجرین کی تعداد میں اضافہ ہوسکتا ہے۔ برما کی فوج کا کہنا ہے کہ انہوں نے گزشتہ روز 400 سے زائد مسلمانوں کو قتل کردیا ہے۔ جنہیں وہ دہشت گرد اور حملہ آور بناکر پیش کرتی ہے۔


کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں

Recent Posts Widget