26 ستمبر، 2017

نوجوانوں کی کاروبار میں شمولیت کے لئے چترال چیمبر آف کامرس اور گورننمنٹ پوسٹ گریجویٹ کالج منجمنٹ سائنسز میں معاہدہ

چترال (ابوالحسین: ٹائمزآف چترال ‏26‏ ستمبر‏ 2017) نوجونواں کو پشہ ورانہ سرگرمیوں میں شامل کرنے کے لئے چترال چیمبر آف کامرس اور گورننمنٹ پوسٹ گریجویٹ کالج آف منجمنٹ سائنسز میں مفاہمتی یاد داشت پر دستخط ہوا ہے۔ 


چترال چیمبر آف کامرس کے نمائندگان کا اس موقع پر کہنا تھا کہ نوجوانوں کی بے روزگاری ایک معاشرتی مسئلہ بن چکا تھا، نوجوان اعلیٰ تعلیم حاصل کرنے کے باجود سرکاری اداروں میں کلاس فور کی نوکریاں کرنے پر مجبور ہیں۔ اس مسئلے کو سامنے رکھتے ہوئے ہم نے یہ قدم اٹھایا ہے کہ تعیلم یافتہ نوجوانوں کو چھوٹے چھوٹے کاروباروں کی جانب راعب کریں تاکہ چھوٹے ملازمت کے بجائے یہ لوگ کاروبار کرکے اپنی آمدن میں اضافہ کرسکیں۔

مفاہمتی یاد داشت پر  سی سی سی کی جانب سے سرتاج احمد خان اور کالج کی جانب سے پروفیسر صاحب الدین سید نے دستخط کئے، اس موقع پر سمال اینڈ میڈیم انٹرپرائزز ڈیولپمنٹ اتھارٹی کے کورڈینیٹر حبیب خان بھی موجود تھے۔  

سرتاج احمد نے اس موقع پر کہا کہ لواری ٹنل کی تکمیل کے بعد اور ممکنہ طور پر پاک چائنا کوریڈور کے چترال سے گزر جانے سے چترال ایک بزنس ہب میں تبدیل ہوجائے گا، ہمیں آج ہی اس وقت کے لئے تیار رہنا چاہئے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس معاہدے کے تحت دونوں ادارے کامرس گریجویٹس کو کاروباری سرگرمیوں میں شامل کرنے کے لئے طویل مدتی اور قلیل مدتی ایک جامع حکمت عملی ترتیب دیں گے۔ اس سلسلے میں  چترال چیمبر آف کامرس (سی سی سی)  پہلے ہی تاجروں، میڈیا ہاؤسز، قانون دانوں، مقامی اداروں، سیاحتی اداروں، ہوٹل مالکان، اساتذہ اور ٹرانسپورٹ باڈیز سے معاہدے کرچکی ہے۔ 


کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں

Recent Posts Widget