نومبر 24, 2017

مسجد میں فائرنگ اور بم دھماکہ : 235 سے زائد نمازی شہید 109 زخمی

کیرو، مصر (ٹائمزآف چترال: نیوز 24 نومبر 2017) مصر کے شمال میں سینا جزائر کی ایک مسجد میں شدت پسندوں کے  حملے میں 235 نمازی شہید ہوگئے  ہیں۔ انتہا پسندوں کی جانب سے مصر میں ہونے والا نمازیوں پر اب تک کا یہ سب سے بدترین حملہ تھا۔ جہاں انتہا پسندوں نے مسجد میں جمعہ کے نمازیوں کو نشانہ بنایا ہے۔ 



مصر کی سرکاری میڈیا ذرائع نے 235 ہلاکتوں کی رپورٹ دی ہے۔ خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ یہ حملہ اسلامک اسٹیٹ سے جڑے دہشت گردوں کی کاروائی ہوسکتی کیونکہ مصر میں اکثر کاروائیاں ان کی جانب سے ہوتی رہی ہیں۔ تاہم ابھی تک کسی گروہ نے حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔

مصر کے شمالی جزائر سینا میں واقع مسجد میں جمعہ کے نمازیوں پر اس وقت حملہ کیا گیا جب مسجد نمازیوں سے بھرا ہوا تھا۔ حملہ آوروں نے پہلے نمازیوں پر فائرنگ کردیں اس کے بعد زوردار دھماکہ ہوا۔

عینی شاہدین کے مطابق دہشت گردوں نے پہلے بھاری بھر کم گاڑی میں مسجد کا چکر لگایا، باہر بم نصب کیا اور حملہ آور ہوئے۔ دہشت گردوں نے گاڑی مسجد کے باہر جانے والے راستے پر گاڑی کھڑی کرکے راستہ بھی بند کردیا تھا۔ 

مصر کے سرکاری ٹیلی ویژن کے مطابق 235 افراد شہید جبکہ 109 زخمی ہوئے ہیں۔  مصری حکومت نے تین روزہ سوگ کا اعلان کردیا ہے۔ اور مصری صدر عبدالفتح وزیر دفاع سے ملاقات کی ہے۔ 

برطانوی فارن منسٹر میں واقعے کی مذمت کرتے ہوئے اسے وحشیانہ قدم قرار دے دیا ہے۔ مصری صدر نے بھی تعذیت کا اظہار کیا ہے۔

کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں

Recent Posts Widget