اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

28 دسمبر، 2017

صوبے کے مختلف سرکاری محکموں کے 75 ہزار722 مستقل ملازمین کی اپ گریڈیشن اور 4743 کنٹریکٹ ملازمین کی ریگولرائزیشن کی منظوری

 


پشاور (رپورٹ: ایم فاروق)  وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک نے صوبے میں مختلف سرکاری محکموں کے 75 ہزار722 مستقل ملازمین کی اپ گریڈیشن اور 4743 کنٹریکٹ ملازمین کی ریگولرائزیشن کی با ضابطہ منظوری دے دی ہے ۔ اپ گریڈ ہونے والے ملازمین میں محکمہ پولیس کے 53883 کانسٹیبلز کی گریڈ 5 سے 7 میں اپ گریڈیشن ، 9095 ہیڈ کانسٹیبلز کو گریڈ 7 سے 9 میں اپ گریڈ کرنے، 2758 سب انسپکٹرز کو گریڈ 9 سے 12 دینے، مختلف کیڈرز کے 4970 لیبارٹی اٹنڈنٹس نیز 23 اسسٹنٹ ڈائریکٹرز فشریز کو گریڈ 17 سے 18 دینے، تین اکنامک انوسٹی گیٹرز ، نو ریسرچ آفیسرز، 24 ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولرز کو گریڈ 16 سے 17 دینے، پانچ ڈپٹی ڈائریکٹرز ایکسائزاینڈ ٹیکسیشن کو گریڈ 18 سے 19 دینے،31 ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن آفیسرز کو گریڈ 17سے 18 دینے، 42 اسسٹنٹ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن آفیسرز کو گریڈ 16 سے 17 دینے ، 165 ایکسائز انسپکٹرز کو گریڈ 15 سے 16 دینے، 26 ایکسائز سب انسپکٹرز کو گریڈ 10سے 14دینے،223اسسٹنٹ سب انسپکٹرز کو گریڈ8سے 11 دینے، محکمہ آبپاشی کے 547 کنال پٹواریوں کو گریڈ 7 سے 9 دینے، 109 ورنیکولر کلرکس کو گریڈ 8سے 11 دینے،محکمہ اطلاعات کے ایک ایڈمن آفیسر کو گریڈ 16 سے 17 دینے، محکمہ ہائے آبنوشی، آبپاشی، مواصلات و تعمیرات اور منصوبہ بندی و ترقیات کے 211 اکاؤنٹس کلرکس کو گریڈ 10سے 14دینے کی منظوری شامل ہے۔ 

اسی طرح انہوں نے صوبے بھر میں مختلف محکموں کے زیر انتظام 53 پراجیکٹس کے 4743 کنٹریکٹ ملازمین کی مستقلی کی با ضابطہ منظوری بھی دی ہے ۔



کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں