20 دسمبر، 2017

پاکستان دہشت گردی کے خلاف جنگ پیسوں کے لئے نہیں لڑی، امریکی ہماری قربانیوں کا اعتراف کرے: ترجمان پاک فوج

اسلام آباد (ویب ڈیسک) پاکستان نے دہشت گردی کے خلاف جنگ پیسوں کے لیے نہیں لڑی، ہمیں امریکا سے سوائے اپنی قربانیوں کے اعتراف کے کچھ نہیں چاہیے۔ جیو نیوز کے پروگرام ’کیپیٹل ٹاک‘ میں گفتگو کرتے ہوئےپاک فوج کے ترجمان میجر جنرل آصف غفور نے کہا ہے کہ امریکا سپر پاور ہے اور خطے میں اس کے اپنے مفادات ہیں لیکن ہم افغانستان کی جنگ دوبارہ پاکستان میں نہیں لڑیں گے، اور اس سلسلسے میں بہت سی باتیں ہو چکی ہیں کہ سرحد پر کیا کرنا ہے اور تعاون کیسے کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سب کو پتہ ہے کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ کیسے شروع ہوئی، کیسے لڑی گئی اور ہم پر کیسے مسلط کی گئی، ہم نے اپنے ملک کے مفاد میں اس جنگ کو اپنی جنگ بنا کر لڑا اور آگے بھی جو کریں گے وہ پاکستان کے مفاد میں کریں گے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے پاکستان سے متعلق بیان پر ڈی جی آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ اس حوالے سے پالیسی بیان تو دفتر خارجہ جاری کرے گا لیکن افواج پاکستان کی جانب سے کہنا چاہتا ہوں کہ ’’امریکا نے 1947 سے لے کر اب تک کچھ 50 ارب ڈالر دیے لیکن یہ ہماری قیمت نہیں ہے۔''


میجر جنرل آصف غفور نے مزید کہا کہ اگر امریکا نے سیکیورٹی کے حوالے سے ہماری کوئی مدد کی ہے تو اس میں ان کے اپنے مفادات ہیں، سپر پاور ہونے کی حیثیت سے امریکا کے تمام ممالک کے ساتھ دفاعی تعلقات ہیں۔ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں کچھ پیسے دے کر، جو ہمارے نقصان کا ازالہ ہے‘ یہ کہنا کہ ہم پاکستان کو بھاری رقم ادا کر رہے ہیں تو پاکستان پیسوں کے لیے جنگ نہیں لڑ رہا۔ انہوں نے کہا کہ اس حوالے سے آرمی چیف اور حکومت پاکستان پہلے بھی بیان دے چکے ہیں، ہمیں امریکا سے سوائے اپنی قربانیوں کے اعتراف کے کچھ نہیں چاہیے۔

امریکا کی جانب سے بھارت کی سرپرستی کے حوالے سے میجر جنرل آصف غفور نے کہا کہ امریکا سپر پاور ہے اور خطے میں اس کے اپنے مفادات ہیں، دونوں خود مختار ممالک ہیں اور ان کے تعلقات چل سکتے ہیں۔

ڈی جی آئی ایس پی آر نے مزید کہا کہ ایک چیز پاکستان نے امریکا کو واضح کی ہوئی ہے کہ پاکستان کے مفادات کو نقصان پہنچانے والی کوئی بھی پالیسی قابل قبول نہیں ہو گی۔ بھارت کی افغانستان میں مداخلت ہے اور پاکستان میں بھارتی جاسوس کلبھوشن کی گرفتاری سب کے سامنے ہے، امریکا بھارت کو چاہے کوئی رتبہ دے لیکن ایسا کوئی کردار جو پاکستان کے مفادات کو نقصان پہچائے وہ قبول نہیں کیا جائے گا۔



کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں