15 دسمبر، 2017

آگ ہیں عمل میرے یا ثواب، رہنے دے : مکمل شاعری پڑھنے کے لئے لنک کھولیں

آگ ہیں عمل میرے یا ثواب، رہنے دے 
حشر میں ہی دیکھیں گے یہ حساب، رہنے دے

زندگی معلِّم ہے، تجھ کو سب سِکھا دے گی 
اس کو سِیکھ لے، پڑھنا ہر کتاب رہنے دے

وصل کی ہر اِک خواہش، وصل سے بھی بہتر ہے 
سامنے نگاہوں کے، یہ سراب رہنے دے

یہ نہ ہو کہیں تجھ کو، لاجواب کر دوں میں 
کچھ سوال رہنے دے، کچھ جواب رہنے دے

عشق کی مسافت میں، پیار میں، مُحبت میں 
کیا کسی نے پایا ہے، یہ حساب رہنے دے

غم کو غم سے بہلانا، آ کے سیکھ لے ہم سے 
آنسوؤں کو پی لے تو اور شراب رہنے دے

ہم فقیر لوگوں کا، ایک ہی اثاثہ ہے 
آنکھ کے کٹورے میں چند خواب رہنے دے

شاعر: نامعلوم



کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں