18 جنوری، 2018

آغاخان ہائی سکول میراگرام یارخون کو ہائر سکنڈری کا درجہ دینے کا فیصلہ، طلبہ وطالبات میں خوشی کی لہر دوڑ گئی

چترال (ٹائمزآف چترال :رپورٹ کریم اللہ) چترال سے 170کلومیٹر شمالی جانب واقع وادی یارخون جہاں انتہائی دو افتادہ اور پسماندہ علاقہ  ہے وہیں اس خطہ کے عوام کی تعلیمی دلچسپی اور نئی نسل کی کامیابیاں بھی نمایاں ہے ۔ غربت وافلاس کے باوجود یہاں کے عوام اپنی اولاد کو جدید زیور تعلیم سے آراستہ کرنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑتے۔  لوگوں کی اس علمی پیا س کو مدنظر رکھتے ہوئے آغاخان ایجوکیشنل سروس چترال کی جانب سے یارخون میراگرام میں آغاخان ہائی سکول کو ہائر سکنڈری کا درجہ دینے کا اصولی فیصلہ کیا گیا ہے۔جس پر  عوام اورطلبہ وطالبات میں خوشی کی لہر دوڑ گئی ۔


اے کے ای ایس چترال اور علاقہ کے نمائندوں کا انتہائی اہم اجلاس میراگرام میں منعقد ہوا جس میں ادارے اور کمیونٹی کے درمیان کامیاب مذاکرات ہوگئے اور عنقریب دونوں فریقین کے درمیان ایم او یو پر دستخط ہونگے۔ یارخون سے ہمارے نمائندے  کے مطابق ہائر سکنڈری  کلاسز کے آغاز کے لئے پہلے مرحلہ میں 31اسٹوڈنٹس  کی ضرورت ہے ، اور آغاخان ہائی سکول کی موجودہ عمارت ہی میں شفٹ میں کلاسز شروع کردیا جائے گا جبکہ بہت جلد آغاخان ہائرسکنڈری سکول کے عمارت کی تعمیر پر بھی کام کا آغاز کیا جائے گا۔ اس پیش رفت کے بعد علاقہ کے لوگوں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی ہے۔ عمایدین کا کہناہے کہ اس فیصلے سے جہاں لوگوں کو ان کی دہلیز پر جدید تعلیم کے مواقع میسر آئینگے وہیں علاقہ کے لوگوں کو  روزگار کے مواقع بھی ملے گی  ۔   عوام نے اس فیصلہ پر جنرل منیجر آغاخان ایجوکیشنل سروس چترال خوش محمد خان کا شکریہ ادا کرتے ہوئے اسے علاقے کے لئے بہت بڑی خدمت قرار دیا ہے ۔



کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں