23 جنوری، 2018

چترال پولیس نے مویشی چور گروہ کو دھر لیا، کہاں کہاں سے درجنوں مویشیاں چرائے ہیں: تفصیل کے لئے پڑھیں

 


چترال (ٹائمزآف چترال نیوز) چترال پولیس بلاآخر مویشی چور گروپ کو پکڑنے میں کامیاب ہوگئی ہے۔ یہ گروہ چترال کے دور دراز کئی علاقوں سے مویشیوں کو چوری کرتا تھا، پولیس کو اس گروہ کی تلاش تھی۔ گروہ چترال میں مویشیاں چوری کرکے ضلع سے باہر لے جاکر فروخت کرتا تھا۔ چترال کے مختلف مقامات سے مویشی چوری کی رپورٹیں تھیں لیکن ابھی تک چوروں کا سراغ نہ تو مقامی لوگ لگا سکے تھے نہ ہی پولیس۔ 

ضلعی پولیس آفیسرچترال  کیپٹن (ر) منصور امان کی ہدایت پر ایس ڈی پی او چترال فاروق جان اور ایس ایچ او تھانہ چترال منیر الملک نے پولیس ٹیم کے ساتھ کاروائی کرتے ہوئے مویشی چور گروہ کو گرفتار کر لیا۔ 

انہوں نے گزشتہ روزچترال تھانے میں میڈیا نمائندوں کا بتایا کہ چترال کے مختلف مقامات سے مال مویشیوں کی چوری کے واقعات معمہ بنے ہوئے تھے۔  انہوں نے بتایا کہ گذشتہ روز رات کے وقت گرم چشمہ روڈ پر ایک مشکوک کار (غوگئے) کو روک کر تلاشی لی گئی اور پوچھ گچھ اور گرم چشمہ روڈ پر نصب سی سی ٹی وی کیمروں کی فوٹیجزسے پتہ چلا کہ  کار میں سوار تینوں افراد مال مویشیوں کی چوری میں ملوث ہیں۔ جنہیں پولیس نے پکڑ کو پیر کو میڈیا کے سامنے پیش کیا، میڈیا کے سامنے تینوں ملزمان زار محمد ولد حضرت عمر ساکن ارندو حال آٹانی ایون، محمد نور ولد دیبار خان بڑاوشٹ ایون اور حضرت حسین ولد روزی خان افغان مہاجر حال مقیم سوئیر دروش نے  صحافیوں کے سامنے اعتراف جرم کیا۔

ملزمان نے بتایا کہ گزشتہ 6 ماہ سے وہ چترال کے مختلف مقامات لٹکوہ، شغور، بونی، موڑکہو، ریشن سے تین بیل اور 77 بکریاں چوری کئے ہیں۔ جن میں سے بعض کو وہ  چترال کے مقام اورغوچ میں ذبح کرکے گوشت فروخت کئے جبکہ باقی مویشیوں کو تیمرگرہ پہنچاکر میلے میں فروخت کئے۔ملزمان نے اپنی مکاریاں بتاتے ہوئے کہا کہ راستے میں آنے والے چیک پوسٹوں میں وہ مویشیوں کو جنگلوں سے گزارتے تھے اور یوں انہیں تیمرگرہ پہنچا کر فوخت کرتے تھے۔ ملزمان ارندو کے گجر قبیلے سے تعلق رکھتے ہیں۔ اور حال ایون آٹانی میں مقیم ہیں۔ پولیس نے چور گروہ سے ایک چھری بھی بر آمد کی ہے  جو مال مویشیوں کو ذبح کرنے کے علاوہ بطور ہتھیار بھی استعمال کرتے تھے۔

ملزمان مقامی میڈیا نمائندوں کے سامنے اعتراف جرم کرتے ہوئے




کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں