27 فروری، 2018

سی پیک کے متبادل سڑک، چترال، بونی، مستوج، شندور کے لئے 19.10 بلین روپے کی منظوری ہوچکی ہے : ممبرقومی اسمبلی افتخار الدین


چترال (مانیٹرنگ ڈیسک) سنٹرل ڈیولپمنٹ ورکنگ پارٹی نے چترال سے گزرنے والی سی پیک کے متبادل سڑک، چترال، بونی، مستوج، شندور کے لئے 19.10 بلین روپے کی منظوری دے دی ہے۔ جس میں 4 پل بھی شامل ہیں۔ ممبر قومی اسمبلی شہزادہ افتخارالدین کے مطابق فروری 12 کو سی ڈی ڈبلیو پی نے 19.10 ارب روپے کے مذکورہ منصوبے کی منظوری دے دی ہے، منصوبہ میں  4 پل بھی شامل ہیں جن کی لاگت 54 کروڑ ہوگی۔

سی پیک کے متبال سڑک پر اوسیک دروش پل 16 کروڑ، شعور پل 16 کروڑ، گشٹ لشٹ کوراغ پل 16 کروڑ اور نیشکوہ ورکوپ پل 16 کروڑ کی لاگت میں تعمیر ہونگے۔  4 پلوں کی منظوری  سی ڈی ڈبلیو پی سے ہوچکی ہے اب ضروری ضابطے کی کاروائی مکمل کرنے کے بعد نیشنل ہائی وے ٹینڈر کرے گی۔ 

ممبر قومی اسمبلی شہزادہ افتخار الدین کی کاوشوں سے مرکزی حکومت چترال کی ترقی میں خاصی دلچسپی لے رہی ہے۔ لواری ٹبل کی تکمیل اور گولین گول بجلی کی تکمیل اور افتتاح نمایاں منصوبے ہیں۔ 15 اپریل کو وزیراعظم پاکستان شاہد خاقان عباسی چترال کا دورہ کریں گے اور گرم چشمہ، کیلاش اور شندور روڈ کا افتتاح کریں گے۔ تریچ سے لوٹ اویر سڑک کی تعمیر بھی بڑے منصوبوں میں شامل ہے۔ ایم این شہزادہ افتخار الدین نے حال ہی میں نیشنل ہائی وے ہیڈ کوارٹرز کا دورہ کیا اور چیرمن این ایچ اے اور ممبر پلاننگ آصف امین اور دیگر حکام سے ملاقات کی، ان کے ہمراہ بادشاہ منیر بخاری اور خالد حسین ایڈوکیٹ بھی تھے۔ جس میں کئی منصوبوں پر اتفاق کیا گیا جن میں سے ایک تریچ سے لوٹ اویر سڑک کی توسیع اور بلیک کارپیٹنگ شامل ہے۔


کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں