27 فروری، 2018

اگر واپڈا نے چترال کو ڈھائی روپے فی یونٹ بجلی نہ دی تو اُسے باہر کرکے پیڈو سے سستا بجلی دلوائیں گے: عبدالطیف

 


چترال (گل حماد فاروقی) پاکستان تحریک انصاف کے راہنماؤں نے کہا ہے کہ محکمہ واپڈا چترال کو ڈھائی روپے فی یونٹ بجلی فراہم کرے ورنہ صوبائی محکمہ برقیات پیڈو کی بجلی گھر بنتے ہی واپڈا کو چترال سے باہر نکال دیں گے اور پیڈو چترال کو پونے تین روپے فی یونٹ بجلی دے گی۔گذشتہ روز بروز کے مقام پر پاکستان تحریک انصاف کے ایک شمولیتی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے پارٹی کے ضلعی صدر عبدالطیف نے کہا کہ چترال ایک غریب ضلع ہے اور واپڈا کے پندرہ روپے فی یونٹ یہاں کے صارفین برداشت نہیں کرسکتے۔ انہوں نے وفاقی حکومت سے مطالبہ کیا کہ واپڈا کی بجلی سستے نرخ پر دی جائے تاکہ چترال کے لوگ اسے کھانا پکانے اور گھروں کو گرم کرنے کیلئے بھی استعمال کرسکیں ورنہ اگلے بیس سالوں میں چترال کے جنگلات ختم ہو جائیں گے۔پی ٹی آئی کے ضلعی صدرنے کہا کہ ہماری پارٹی نے جو نعرہ لگایا تھا اسے پورا کرکے دکھایا۔ 

صحت، تعلیم پولیس، مالیات میں کافی بہتری آئی اور اب کوئی رشوت دیکر بھرتی نہیں ہوتے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف ایک تحریک کا نام ہے اور ہمارا مشن اس وقت تک جاری رہے گا جب تک عمران خان کو ہم وزیر اعظم نہ بنائیں۔ پارٹی راہنما آفتاب طاہر نے کہا کہ بعض سیاست دان بلا وجہ کریڈٹ لینے کی کوشش کررہے ہیں۔ لواری ٹنل پر کام ذوالفقار علی بھٹو نے شروع کیا تھا اور اس کی تکمیل پرویز مشرف کے دور میں ہوئی۔ اسی طرح گولین گول بجلی گھر پر کام مشرف کے دور میں شروع ہوا تھا اوریہ پاکستان تحریک انصاف کے دور حکومت میں پورا ہوا۔ اب رکن قومی اسمبلی خواہ مخواہ اس کا کریڈٹ لینے کی کوشش کررہے ہیں جب کہ ان دونوں منصوبوں میں ان کا کوئی کردار نہیں ہے۔


شمولیتی جلسہ میں 70 افراد نے دوسرے پارٹی چھوڑ کر پاکستان تحریک انصاف میں شمولیت اختیا ر کی۔ بعد ازاں پارٹی راہنماؤں نے پارٹی کے نئے دفتر کا افتتاح بھی کیا۔ شمولیتی جلسہ میں کثیر تعداد میں پارٹی کارکنوں نے شرکت کی۔



کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں