1 فروری، 2018

پی پی رہنما اور صوبائی وزیر میر ہزار خان بجارانی اوران کی اہلیہ قتل، لاشیں گھر برآمد

 



کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما اور صوبائی وزیر برائے پلاننگ اینڈ ڈیولپمنٹ میر ہزار خان بجارانی اور ان کی اہلیہ فریحہ رزاق کی لاشیں ڈیفنس میں واقع ان کی رہائش گاہ سے برآمد ہوئیں ہیں۔ 

مقتول کے خاندانی ذرائع نے بھی واقعے کی تصدیق کردی ہے اور ان کا کہنا ہے کہ میر ہزار خان بجارانی اور ان کی اہلیہ کی لاشیں ڈیفنس فیز 5، خیابان شہباز میں واقع ان کے گھر سے برآمد ہوئیں ہیں، لاشوں پر گولیوں کے نشانات ہیں۔ تاہم قاتل کا سراغ ابھی نہیں ملا سکا ہے۔ فیملی ذرائع کے مطابق دن 12 بجے کے قریب صوبائی وزیر کے کمرے کا دروازہ کھٹکھٹایا گیا، تاہم نہ کھلنے پر دروازہ توڑا گیا، جہاں میر ہزار خان بجارانی اور ان کی اہلیہ کی لاشیں پڑی تھیں۔

پولیس کے مطابق جائے وقوع سے ایک 30 بور کی پستول ملی ہے، راجہ عمر خطاب محکمہ انسداد دہشت گردی (سی ٹی ڈی) کے انچارج راجہ عمر خطاب نے بتایا ہے کہ میر ہزار خان بجارانی اور ان کی اہلیہ فریحہ رازق کی لاشیں بیڈ روم سے متصل اسٹڈی روم سے ملی ہیں، میر ہزار خان کی کنپٹی پر گولی لگی ہے۔
موقع سے چار گولیاں بھی ملی ہیں جو مس فائر ہوئیں ، تیس بور کے جس پستول سے گولیاں چلائی گئیں وہ بھی مل گیا۔

تفصیلات کے مطابق فریحہ رزاق کی لاش زمین پر جبکہ ان کے خاوند میر ہزار خان بجارانی کی لاش صوفے پر پائی گئی ہے دونوں کو ایک ایک گولی لگی ہے۔

واقعے کی اطلاع ملتے ہے پیپلز پارٹی نے تمام سیاسی سرگرمیاں معطل کردی ہے اور وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ اور وزیر داخلہ سندھ سہیل انور سیال سمیت دیگر مرحوم میر ہزار خان بجارانی کے گھر پہنچ گئے۔




کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں