مارچ 16, 2018

لطیفے ہی لطیفے : تین مزے مزے کے لطیفے انجوائے کریں

 

ایک ان پڑھ بندہ سعودی عرب چلا گیا۔ وہاں گھومنے پھرنے کی غرض سے نکلا۔ پر جگہ عربی لکھی تھی۔ 
جہاں دیکھتا چومنا شرو کر دیتا۔ کافی دیر اسی طرح کرتا رہا۔ ایک جگہ پر عربی میں کچھ لکھا تھا تو پھر اسے چومنا اور ہاتھ لگانا شروع کر دیا۔ 

پاس سے گزرتے ہوئے ایک شخص نے کہا۔ 
”یہ تم کیا کر رہے ہو“ اس نے جواب د یا۔ ”عربی لکھی ہے میں ادب سے چوم رہا ہوں۔“ 
اس شخص نے جواب دیا۔ ”یہ بیت الخلا ہے۔“


☺☺☺


کسی فقیر نے ایک آدمی سے پیسے مانگے۔ 
اس آدمی نے کہا کہ میں تین بار اپنی داڑھی پر ہاتھ مارتا ہوں ۔ جتنے بال میرے ہاتھ میں آئیں گے تمہیں اتنے ہی روپے دوں گا۔ 

اس نے تین بار ہاتھ مارا مگر کوئی بال ہاتھ نہیں آیا۔ اس آدمی نے فقیر سے کہا۔ ”تمہاری قسمت میں کچھ بھی نہیں ہے۔“ 

فقیر نے کہا۔ ”یوں نہیں حضور!داڑھی آپ کی اور ہاتھ میرا۔ پھر دیکھے میری قسمت۔“

☺☺☺


دو دوست کشی پر سوار تھے۔ 

ایک نے کہا: بھئی کشتی ڈگمگا رہی ہے ایسا نہ ہو کہیں ڈوب جائے؟ 

دوسرے نے کہا: ”ڈوب جانے دو کمبخت نے کرایہ بھی بہت لیا ہے۔“





کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں