11 اپریل، 2018

چھ ماہ میں 22 خود کشیاں، چترال وادی کیلاش میں ایک اور لڑکی نے خودکشی کرلی


چترال (گل حماد فاروقی) وادی کیلاش کے خوبصورت گاؤں بریر میں ایک جواں سال لڑکی نے خودکشی کرکے زندگی کا حاتمہ کردی۔ پچھلے چھ ماہ میں خودکشی کا یہ تقریباً 22 واں کیس ہے۔ ایس ایچ او تھانہ آیون کے مطابق تھانہ کے حدود میں واقع وادی کیلاش کے بریر گاؤں میں بیس سالہ سعدیہ بی بی دختر بہادر خان نے خودکشی کر لی۔ پولیس کے مطابق متوفیہ نے زہریلی گولیاں کھاکر زندگی کا حاتمہ کردی۔ اس کی لاش کی تحصیل ہیڈ کوارٹرز ہسپتال آیون پہنچایا گیا مگر ڈاکٹروں نے ان کی موت کی تصدیق کرلی بعد ازاں اس کی لاش کو پوسٹ مارٹم کیلئے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹرز ہسپتال چترال لیا گیا جہاں پوسٹ مارٹم کے بعد اسے ورثاء کے حوالہ کیا گیا۔

آیون پولیس اس سلسلے میں مزید تفتیش کررہے ہیں۔ پولیس کے مطابق ابتدائی معلومات سے یہ معلوم ہوتاہے کہ لڑکی نے زہریلی دوا یا گولیاں کھاکر خودکشی کرلی ہے۔ تاہم خودکشی کی اصل وجوہات ابھی معلوم نہ ہوسکی البتہ ان کے گھر والوں کے مطابق سعدیہ کی منگنی یعنی رشتہ ٹوٹنے کی وجہ سے وہ دل برداشتہ ہوئی اور اپنی زندگی کا حاتمہ کردی۔ ایک محتاط اندازے کے مطابق پچھلے سات مہینوں میں خودکشیوں کا یہ تقریباً 22 واح کیس ہے جن میں زیادہ تعداد خواتین کی ہیں تاہم بھی تک سرکاری یا کسی غیر سرکاری ادارے نے خودکشیوں کی روک تھام کیلئے کوئی ٹھوس اقدام نہیں اٹھایا ہے۔ تاہم ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر چترال منصور امن نے پہلی بار اپنی تئیں خودکشیوں کی روک تھام کیلئے تھانہ چترال میں خواتین رپورٹنگ کیلئے الگ دفتر کھولا ہے جہاں لیڈیز پولیس کانسٹبل خواتین کی رپورٹ درج کرتی ہے۔ ہمارے نمائندے سے باتیں کرتے ہوئے ڈی پی او منصور امان اور لیگل ایڈوائزور انسپکٹر محسن الملک نے بتایا کہ تھانہ چترال میں خواتین کیلئے الگ ڈیسک اسلئے قائم کیا گیا تاکہ خواتین وہاں آسانی سے آکر خاتون پولیس عملہ کو بغیر کسی جھجک کے اپنا مسئلہ بیان کرسکے اور ان کی بروقت مدد کی جاسکے ۔ ہوسکتا ہے اس عمل سے خودکشیوں کی شرح میں کمی آسکے۔

کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں