اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

12 اپریل، 2018

جنوبی پنجاب کے 8 ارکان کے پارٹی چھوڑنے کے بعد ن لیگ کو ایک اور زور دار جھٹکا، کون جارہا ہے؟

 



اسلام آباد(آن لائن) پاکستان مسلم لیگ سے منسلک شیرازی گروپ کے ارکان اور ارباب غلام رحیم سمیت سندھ کے کچھ دوسرے ارکان اسمبلی پاکستان تحریک انصاف کے ساتھ رابطے میں ہیں اور ایسا ممکن ہو سکتا ہے کہ آنے والے دنوں میں ن لیگ کو چھوڑ کر تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کر لیں ۔

مقامی اخبار ایکسپریس ٹرابیون کے مطابق گزشتہ سال فروری میں سندھ گورنر کے تقرر کے لئے شیرازی گروپ کے امیدوار کو نظر انداز کرنے پر انہوں نے مسلم لیگ ن کی مرکزی قیادت سے پہلے ہی اختلافات تیار کر چکے ہیں.شیرازی گروپ کے سربراہ سید شفیق شاہ شیرازی سندھ گورنر کے عہدے کے لئے ایک مضبوط امیدوار کے طور پر سامنے آئے تھے۔شفیق کو طویل عرصے سے دیہی سندھ کی سیاست، خاص طور پر ٹھٹا اور اسکے ملحقہ علاقوں میں ”کنگ میکر“تصور کیا جاتا ہے۔

اس گروپ میں پاکستان مسلم لیگ (ن )کے ایم پی اے شاہ حسین شاہ، اعجاز حسین شاہ شیرازی ،آزاد ایم پی اے امیر حیدر شاہ شیرازی اور آزاد ایم پی اے عامر حیدر شاہ شیرازی شامل تھے جنہوں نے شفقت کو سندھ گورنر نامزد کروانے کے لئے بڑے پیمانے پرایک لوبی بنائی تھی۔تاہم، سابق وزیر اعظم نواز شریف نے محمد زبیر کو دیہاتی سندھ کے تمام امیدوار وں پر ترجیح دی، جس بات پر شیرازی گروپ اور مسلم لیگ (ن )کے درمیان اختلافات پیدا ہوئے.



کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں