25 اپریل، 2018

چترال میں ایک اور لڑکی نے زہر کھاکر خودکشی کرلی، واقعات میں تشویشناک اضافہ ہورہا ہے

چترال میں ایک اور حوا کی بیٹی نے زندگی کا حاتمہ کردی۔ زہریلی دوا کھاکر خودکشی کرنے والی لڑکی کو سپرد خاک کیا گیا۔



چترال (گل حماد فاروقی) چترال میں خودکشیو ں میں تشویش ناک حد تک اضافے سے عوام نہایت پریشان ہیں۔ تفصیلات کے مطابق چترال شہر سے چارکلومیٹر کے فاصلے پر جغور گاؤں میں ایک نوجوان لڑکی نے زہریلی دوا کھاکر خودکشی کرلی۔ جغور کے رہایشی ام سلمہ دختر اولاد حسین نے اپنے گھر میں زہریلی دوا کھائی جس سے اس کی حالت غیر ہونے لگی۔ ام سلمہ کو فوری طور پر ہسپتال پہنچائی گئی مگر وہ جانبرد نہ ہوسکی اور ہسپتال میں چل بسی۔پوسٹ مارٹم کرنے کے بعد اس کی لاش کو ورثاء کے حوالہ کی گئی جسے آبائی قبرستان میں سپرد خاک کی گئی۔ چترال میں پچھلے سات مہینوں میں خودکشیوں کا تقریباً یہ 24 واں واقعہ ہے جن میں زیادہ تر نوجوان لڑکیاں شامل ہیں۔ چترال میں خودکشیوں کے واقعات میں تشویش ناک حد تک اضافے سے علاقے کے لوگوں میں کافی پریشانی پائی جاتی ہے تاہم ابھی تک کسی سرکاری یا غیر سرکاری ادارے نے اس کی تدارک یا وجہ جاننے کیلئے کوئی حاطر خواہ قدم نہیں اٹھایا ہے۔ 

جبکہ چترال میں خودکشیو ں کے علاوہ دل کا دورہ پڑنے سے اموات میں بھی اضافہ ہوا ہے پچھلے ایک ہفتے میں چار لوگ دل کا دور ہ پڑنے سے جاں بحق ہوئے ہیں۔ چترال ک عوام مطالبہ کرتے ہیں کہ اس کی وجہ جاننے اور تدارک کیلئے ماہرین کا ٹیم یہاں بھیجنا چاہئے تاکہ اس کی وجہ معلوم کرکے اس کی روک تھام ہوسکے۔


کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں