29 مئی، 2018

آل پرائمری ٹیچرز ایسوسی ایشن کے صوبائی صدر ملک خالد خان کے المناک موت پر تعزیتی اجلاس؛ ایصال ثواب کیلئے فاتحہ خوانی اور اجتماعی دعاء


آل پرائمری ٹیچرز ایسوسی ایشن کے صوبائی صدر ملک خالد خان کے المناک موت پر تعزیتی اجلاس۔ مرحوم صدر کی روح کی ایصال ثواب کیلئے فاتحہ خوانی اور اجتماعی دعاء بھی کی گئی۔

چترال (گل حماد فاروقی) آل پرائمری ٹیچرز ایسوسی ایشن APTA کے صوبائی صدر ملک خالد خان جو گزشتہ روز اچانک انتقال کر گئے ان کی خدمات کو سراہنے اور ان کی روح کی ایصال ثواب پہنچانے کیلئے گورنمنٹ پرائمری سکول چترال میں ایک تعزیتی اجلاس منعقد کیا گیا جس کی صدارت محمد اشرف سابق صدر ایپٹا چترا ل کر رہے تھے۔ اس تعزیتی اجلاس میں پرائمری سکول کے علاوہ مڈل اور ہائی سکولوں کے اساتذہ نے بھی بھر پور انداز سے شرکت کی۔


تعزیتی اجلاس کا آغاز تلاوت کلام پاک سے ہوا ۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مقررین مرحوم صدر ملک خالد کی خدمات کو سراہا جونہایت محلص اور دیانت دار شحصیت کے مالک تھے۔ انہوں نے کہا کہ ملک کی خالد کی کوششوں سے پاکستان کی تاریح میں پہلی بار پرائمری سکول کے اساتذہ کو اپنا مقام مل گیا۔ جو پہلے بنیادی سکیل نمبر ۵ میں بھرتی ہوتے تھے اور تیس سال بعد سات سکیل میں ریٹائر ہوتے مگر ان کی
کوششوں سے ٹائم سکیل اور از سر نو اس پر کام ہوا جس کے نتیجے میں اب پرائمری سکول کے اساتذہ بھی پندرہ اور سولہ سکیل تک ترقی پاسکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ان اساتذہ کو اتنا بڑا سکیل کے علاوہ ان کی تنخواہوں میں بھی اضافہ ہوا اور فائر ووڈ یعنی سوحتنی لکڑی کی مد میں بھی ماہوار رقم میں بہت اضافہ کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ مرحوم کا کوئی اولاد نہیں تھا اور وہ پرائمری سکول کے اساتذہ کو اپنے بچے ہی سمجھتے تھے اس لئے دن رات ایک کرکے ا ن کی فلاح و بہبود اور ترقی کیلئے کوشش کررہے تھے جو آحر کار اپنے مقصد میں کامیاب ہوئے اور پرائمری سکول کے استاد کو بھی اپنا حق مل گیا۔ 

تقریب سے محمد ولی صدر تحصیل لٹکوہ، محمد اشرف ہیڈ ماسٹر اورغوچ سکول، ضیا ع الدین صدر سکول آفیسرز ایسوسی ایشن، قاری محمد یوسف جنر ل سیکرٹری آل ٹیچرز ایسوسی ایشن، احمد الدین اسسٹنٹ ایجوکیشن آفیسر، ذرتاج احمد ہیڈ ماسٹر آیون وغیرہ نے اظہار حیال کرتے ہوئے مرحوم صدر کو حراج تحسین پیش کیا اور ان کی خدمات کو سراہا جو تاحیات یاد رکھی جائے گی۔ بعد میں مرحوم کی روح کی ایصال ثواب کیلئے اجتماعی دعاء بھی کی گئی۔


کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں