28 مئی، 2018

کمر کی ہڈی ٹوٹنے کے بعد دونوں ٹانگوں سے معذور یوسف خان کا مفت علاج اور مالی تعاون کے لئے اپیل

چترال(گل حماد فاروقی) پاک افغان سرحدی علاقے کے باشندے جوان سال یوسف خان جو کمر کی ہڈی ٹوٹنے کے بعد اب مکمل طور پر دونوں ٹانگوں سے معذور ہوچکا ہے نے مفت علاج اور مالی مدد کی اپیل کی ہے۔ تفصیلات کے مطابق یوسف خان کے والد کا تعلق افغان صوبے نورستان کے علاقے گواردیش سے تھا جو افغان جنگ میں مارا گیا تھا یوسف خان کی والدہ ارسون چترال کی باشندہ ہے ۔ اپنے شوہر وکیل خان کے موت کے بعد وہ واپس اپنے میکے یعنی چترال کے ارسون گاؤں آئی اور یہاں رہائش پذیر ہے۔ اس کو میراث میں جائداد ملی اور وہ اپنے بچوں کو لیکر اس گھر میں وہ رہائش پذیر ہے۔ 


یوسف خان ایک صحت مند انسان تھے اور تعلیم کے سلسلے میں کابل افغانستا ن میں تھا جہاں جب بھی کوئی پاکستان کے حلاف بولتا تو یہ ان کو منہ توڑ جواب دیتا۔ اس نے ایک دن کابل میں پاک فوج زندہ باد کا نعرہ لگایا تو کابل کے جیل میں اسے ڈالا گیا۔ جب جیل سے رہا ہوا تو تورحم بارڈر سے ایک بار پھر پاک فوج زندہ باد کا نعرہ لگاتے ہوئے پاکستا ن میں داحل ہوا۔پاکستان اور پاک فوج کی محبت میں اسے کابل میں تعلیم چھوڑنا پڑا اور پاکستان میں اپنے نانیال کے گھر ارسون میں قیام پذیر ہوا۔ 2015 کو جو تباہ کن سیلاب آیا تھا ا س وقت یہ الخدمت فاؤنڈیشن کے جانب سے پیش پیش رہے اور سیلاب زدگان کی بہت خدمت کی ۔وہ ایک نہایت اچھے انسان اور سماجی کارکن بھی ہے۔ یوسف خان نے شادی کرلی او ر اپنے والدہ کے ساتھ اسی گھر میں رہنے لگا۔ 

وہ ایک محنتی انسان تھا اور اپنے اہل حانہ کیلئے رزق حلال کماتا تھا۔ ایک دن دوستوں کے ساتھ دکان کے چھت پر کھڑا ہوکر گپ شپ لگا رہے تھے کہ اچانک دکان کی چھت سے نیچے گرگئے اور اس کی کمر نیچے پڑی ہوئی ایک بڑی پتھر پر لگ گئی جس سے اس کی ریڑھ کی ہڈی ٹوٹ گئی۔ اسے پشاور لے گئے مگر اس کا علاج نہ ہوسکا ایک تو غربت دوسرا سرکاری ہسپتالوں کی حالت زار۔ 

اب حالت یہ ہے کہ یوسف خان کو معزوری کی وجہ سے اس کی بیوی چھوڑ کر چلی گئی ۔ ارسون سے تعلق رکھنے والے تحصیلدار حاجی عبد السلام نے ہمارے نمائندے کو فون پر بتایا کہ مقامی لوگوں نے یوسف خان کیلئے ویل چئیر Wheel Chair کا بندوبست کیا اور اس کی صحت بھی بہتری کی طرف آرہا ہے ۔ مقامی ڈاکٹروں سے معائنہ کرنے کے بعد یہ بھی انکشاف ہوا ہے کہ اگر اس کی صحیح معنوں میں علاج کی جائے تو وہ تندرست بھی ہوسکتا ہے۔

یوسف خان اب اپنے ویل چئیر پر چل پھر کر رزق حلال کمانے کا کوشش تو کرتا ہے مگر اس کو کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ انہوں نے وفاقی اور صوبائی حکومت ، چیف آف آرمی سٹاف اور مخیر حضرات سے اپیل کی ہے کہ اس کی مفت علاج کیلئے بندوبست کرے تاکہ وہ خود صحت مند ہوکر اپنے اہل حانہ کیلئے رزق حلال کمائے اور اس کے ساتھ مالی مدد بھی کرے کیونکہ معذوری کی وجہ سے وہ نہایت کسمپرسی کا شکار ہے۔ یوسف خان کے ساتھ فون نمبر 03445755369 پر رابطہ کیا جاسکتا ہے۔ یا پھر گاؤں ارسون تحصیل دروش ضلع چترال خیبر پحتون خواہ پر حط و کتابت ہوسکتا ہے۔ 


کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں