12 جون، 2018

ہنسنا بھی تو ضرور ی ہے: لیجئے دو مزے کے لطیفے پیش خدمت ہیں #لطیفے

 

ہیلری کلسٹن بیچ پر واک کر رہی تھیں ایک لہر آئی: اس کے ساتھ ایک بوتل بھی تھی۔ 
ہیلری نے اس بوتل کو کھولا۔ تو اس کے اندر سے کالا سا بڑا جن برآمد ہوا اور اس نے کہا ۔
”میں جن ہوں میری آقا! “

”تم نے مجھے آزاد کیا۔ کوئی بھی ایک خواہش مجھے بتاوٴ میں ابھی پوری کردوں گا۔“ ہیلری بولیں۔ 
”مڈل ایسٹ کے مسئلے کا حل بتاوٴ؟“ 

جن نے کچھ سوچا اور بولا۔
”میری آقا! کچھ کام ایسے ہیں جو جن بھی نہیں کر سکتے کوئی اور حکم کریں؟“ 
اچھا پھر ایسے کرو کہ کلٹن کو میرے ساتھ ہمیشہ کے لئے با وفا کردو۔“ 
میرا خیال ہے میں ایک نظر مڈل ایسٹ کا نقشہ ہی دوبارہ دیکھ لوں۔ جن نے جواب دیا۔

--☺--

ایک آدمی اپنے بیٹے کے ساتھ جج کے لیے جا رہے تھا۔ اس کے بیٹے کا نام اسلام تھا۔ 
اسی آدمی نے اپنے بیٹے کو کسی کام سے بھیجا تھا۔ 
ایک گھنٹہ ہو گیا۔ وہ نہ آیا۔ 
جب جہاز جانے لگا تو اس آدمی نے آواز لگائی۔ 
”اسلام“۔ 
بندر گاہ پر کھڑے لوگ جذبات میں آ گئے اور سب نے ایک ساتھ کہا۔ 
”زندہ باد“۔






کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں