2 اگست، 2018

اقلیتی رکن صوبائی اسمبلی کے منتحب ہونے پر وادی کیلاش کے رمبور گاؤں میں جشن کا سماء۔ تینوں وادیوں سے کیلاش اور مسلمان دونوں مبارک باد کیلئے رمبور پہنچ گئے۔




چترال(گل حماد فاروقی) وادی کیلاش کے رمبور گاؤں سے تعلق رکھنے والے معروف سماجی کارکن اور کیلاش قبیلے کے رکن وزیر زادہ کیلاش کو پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے اقلیتی نشتوں کیلئے ٹکٹ دیا گیا تھا اب چونکہ صوبے میں ان کی بھاری اکثریت آگئی تو وزیر زادہ کیلاش بھی اقلیت کے حصوصی نشستوں میں سے ایک پر رکن صوبائی اسمبلی منتحب ہوا۔ اس خوشی میں وادی میں جشن کا سماء ہے اور جب سے انتحابات حتم ہوئے ہیں اس دن سے لیکر آج تک مہمانوں کا تانتا باندھا ہوا ہے۔ سات سمندر پار سے پاکستان تحریک انصاف کی مہم کو کامیاب بنانے اور ان کو اپنے اہل حانہ سے ووٹ ڈلوانے کیلئے ڈاکٹر محمد عدنان بھٹہ بھی حصوصی طور پر پاکستان آئے جنہوں نے PTI کا بیج قمیص پر لگایا تھا اور اپنی گاڑی پر پارٹی کے جھنڈیاں بھی لگائی تھی۔ اس موقع پر وہ مہمان حصوصی کے طور پر وادی رمبور میں اس جشن میں شریک ہوئے ۔

آج حسب دستور سات جانور کاٹے گئے ان جانوروں کو حصوصی طور پر مسلمان ذبح کرتے ہیں اور کھانا بھی مسلمان پکاتے ہیں تاکہ دونوں قبیلوں کے لوگ اسے بلا جھجک کھائے۔ وزیر زادہ کو کیلاش اور مسلمان دونوں مبارک دیتے ہیں اور روزانہ سینکڑوں کے حساب سے مرد اور خواتین آتے ہیں۔ 



کیلاش قبیلے کے مرد اور خواتین نے اپنی روایات کے مطابق ڈھولک کی تھاپ اور بانسری کی سر پر روایتی رقص بھی پیش کیا۔ 

پاکستان تحریک انصاف کے ضلعی صدر اور قومی اسمبلی کیلئے نامزد امیدوار عبد الطیف اور صوبائی اسمبلی کے امیدوار اسرار الدین، حاجی سلطان نے بھی اس تقریب میں شرکت کی۔ 

ہمارے نمائندے سے باتیں کرتے ہوئے ڈاکٹر محمد عدنان نے کہا کہ وہ پاکستان تحریک انصاف کے چئیرمین عمران خان سے بہت متاثر ہے اور یہی وجہ ہے کہ وہ اس انتحابات میں اپنا حصہ ڈالنے کیلئے حصوصی طور پر وقت سے پہلے چھٹی لیکر سات سمندر پار سے چترال پہنچ گیا۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان واحد لیڈر ہے جن سے امیدیں وابستہ ہیں کہ وہ پاکستان سے بدعنوانی، اقرباء پروری، نا انصافی اور اخلاقی برایوں کا حاتمہ کریں گے اور وہ ایک ایسے پاکستان کا بنیاد رکھیں گے جہاں ہر طبقہ خوش ہوگا اور لوگ محرومی کے شکار نہیں ہوں گے۔ 

ایم ایس سی باٹنی سے حال ہی میں فارغ ایک کیلاش لڑکی گل نظر نے کہا کہ وہ وزیر زادہ کے بطور اقلیتی رکن صوبائی اسمبلی بہت خوش ہیں اور امید کرتی ہے کہ عمران خان ان کو وزارت بھی دیں گے۔

عیسائی خاتون نجمہ اپنے اہل حانہ کے ساتھ حصوصی طور پر وزیر زادہ کو مبارک دینے کیلئے وادی کیلاش رمبور آئی تھی ، نقاش مسیح بھی اس خوشی میں شریک ہوئے اور انہوں نے کہا کہ لوگ عمران خان کے بارے میں افواہیں پھیلا رہے تھے کہ وہ اقلیتی کو کوئی حاص توجہ نہیں دیتے تو اس بات سے وہ بہت متاثر ہوئے کہ انہوں نے ایک کیلاش لڑکے کو اقلیتی کا ٹکٹ دیا۔ 

رضیہ بھی ایک طالبہ ہے وہ بہت خوش ہے کہ عمران خان نے وزیر زادہ کیلاش کو ٹکٹ دیا اور ایک اور کیلاش لڑکی نے یہ بھی مطالبہ کیا کہ خان صاحب اب وزیر زادہ کو وزیر بھی بنادے تاکہ کیلاش لوگوں کی صدیوں سے محرومیاں حتم ہوجائے۔ 

وزیر زادہ کیلاش کو اقلیتی نشت پر ٹکٹ دینے پر کیلاش اور مسلمان دونوں بہت خوش ہیں اور وہ روزانہ سینکڑوں کی تعداد میں مبارک باد کیلے آتے ہیں مہمانوں کا ضیافت روایتی کھانوں سے کی جاتی ہے اور اس فیصلے سے پی ٹی آئی نے یہ ثابت کردیا کہ وہ کسی بھی طبقے کو محروم نہیں کرتے سب کو برابری کے بنیاد پر ان کو حقوق دلواتے ہیں۔ 


کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں