14 ستمبر، 2018

نیشنل کائونٹر ٹیرارزم اتھارٹی کے تعاون سے منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کی مالی معاونت کے خاتمے پر آگاہی کے حوالے سے سیمنار کا انعقاد کیا گیا

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) سکیورٹیز اینڈ ایکس چینج کمیشن آف پاکستان (ایس ای سی پی) نے غیر منافع بخش اداروں کو ایس ای سی پی کے منی لانڈرنگ کی اور دہشت گردی کی مالی معاونت کی روک تھام کے لئے ریگولیٹری فریم ورک پر آگاہی دینے کے لئے نیشنل کائونٹر ٹیرارزم اتھارٹی ( نیکٹا) کے تعاون سے سیمینار منعقد کیا۔ ایس ای سی پی نے حال ہی میں غیر منافع بخش اداروں کے لئے اینٹی منی لانڈرنگ اور کائونٹر فنانشل ٹیرارزم گائیڈ لائنز جاری کی ہیں جن میں ان اداروں کو ان اقدامات سے متعلق رہنمائی فراہم کی گئی ہے جو منی لانڈرنگ کی اور دہشت گردی کی مالی معاونت کی روک تھام کے لئے غیر منافع بخش اداروں (این پی اوز) کو قانون کے تحت اٹھانے ہیں۔

اس سیمینار کا مقصد غیر منافع بخش شعبے اور حکومتی اداروں کے مابین اس حوالے سے شراکت داروں اور تعاون کو فروغ دینا تھا۔

بین الاقوامی ادارے، فنانشل ایکشن ٹاسک فورس نے بھی حکومت اور غیر منافع بخش اداروں کے مابین باہمی تعاون اور مشترکہ کاوشوں کی سفارش کی گئی ہے۔ ایس ای سی پی کے حکام نے شرکاء کو کمپنیز ایکٹ 2017 کے تحت تشکیل دی گئی غیر منافع بخش اداروں پر لاگو ہونے والے انضباطی فریم ورک سے آگاہ کیا۔

انہوں نے غیر منافع بخش تنظیموں کے لئیمنی لانڈرنگ / دہشت گردی کی مالی معاونت کے تدارک کی متعلق کئے گئے انضباطی اقدامات پر روشنی ڈالی۔ مزید برآں شرکا ء کو بتایا گیا کہ گائیڈ لائنز کے اجراکے ذریعے ایس ای سی پی نے کوشش کی ہے کہ منی لانڈرنگ کے انسداد اور دہشت گردی کی مالی معاونت کے تدارک کو اس انداز میں کیسے یقینی بنانا ہے کہ غیر منافع بخش تنظیموں کا بنیادی کام متاثر نہ ہو۔

نیکٹا کے ماہرین نے شرکاء کو نیکٹا کی جانب سے ملک میں دہشت گردی کی مالی معاونت کے تدارک کے ضمن میں کئے گئے اقدامات پر روشنی ڈالی۔ انہوں نے دیگر سٹیک ہولڈرز اور اتھارٹیز کے تعاون سے ایف اے ٹی ایف کی سفارش نمبر 8 پر عمل درآمد یقینی بنانے کے لئے نیکٹا کی جانب سے اٹھائے گئے اقدامات کی بھی وضاحت کی۔ سیمینار میں صحت، تعلیم، معاشرتی اصلاح کے شعبوں میں کام کرنے والے غیر منافع بخش اداروں، این جی اوز کے نمائندوں نے بھر پور شرکت کی اور دلچسپی کا اظہار کیا۔

غیر منافع بخش اداروں کی کمپنیز ایکٹ کی دفعہ 42 کے تحت لائسنس کے طریقہ کار، ٹیکس چھوٹ حاصل کرنے کے لئے سرٹیفیکیٹ کے حصول اور مختلف حکومتی اداروں سے سکیورٹی کلیئرنس کے معاملات پر بھی بات ہوئی۔ ایس ای سی پی کے حکام نے حال ہی میں جاری کئے گئے اینٹی منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کی مالی معاونت کی روک تھام کے لئے جاری کئے گئے انضباطی فریم ورک پر بریفنگ دی اور شرکا سے اس حوالے سے آراء و تجاویز لیں۔
اس سلسلے میں مزید سیمینار دیگر شہروں میں بھی منعقد کئے جائیں گے تاکہ ملک بھر کے غیر منافع بخش شعبے میں کام کرنے والے اداروں کو فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کے سفارشات اور ایس ای سی پی کے ریگولیٹری فریم ورک سے آگہی فراہم کی جائے اور منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کی مالی معاونت کے خلاف موثر اقدامات کئے جا سکیں۔




کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں