22 ستمبر، 2018

لواری سرنگ کے بندش پر چیف جسٹس آف پاکستان نے از خود نوٹس لے لیا۔ حکام سے پانچ دن کے اندر رپورٹ طلب کرنے کا حکم۔

 

لواری سرنگ کے بندش پر چیف جسٹس آف پاکستان نے از خود نوٹس لے لیا۔ حکام سے پانچ دن کے اندر رپورٹ طلب کرنے کا حکم۔



چترال (گل حماد فاروقی) لواری سرنگ کے بندش کے حلاف چیف جسٹس سپریم کورٹ آف پاکستان فاضل جسٹس میاں ثاقب نثار نے نوٹس لیا۔ چیف جسٹس نجی دورے پر چار دن کیلئے چترال بذریعہ سڑ ک پہنچے تو عوام نے ان کو شکایت کی کہ لواری سرنگ کی تکمیل مکمل ہوچکی ہے مگر اس کے باوجود اسے بہت کم عرصے کیلئے عوام کیلئے کھول دیا جاتا ہے جبکہ اہم شحصیات کسی بھی وقت اس کے اندر سے گزرکر سفر کرسکتے ہیں مگر عوام کو کئی گھنٹے انتظار کی صعوبت برداشت کرنا پڑتا ہے اور سیکورٹی عملہ ان کو یہ بہانہ کرتے ہیں کہ اندر کام ہورہا ہے مگر اندر کوئی کام نہیں ہوتا لوگوں کو بلا وجہ تنگ کیا جاتا ہے۔

چیف جسٹس آف پاکستان نے اس پر نوٹس لیتے ہوئے وفاقی سیکرٹری مواصلات، چیف سیکرٹری خیبر پحتون خواہ او ر چئیرمین نیشنل ہائی وے اتھارٹی سے پانچ دن کے اندر رپورٹ طلب کیا ہے کہ لواری سرنگ میں کیوں عوام کو تنگ کیا جاتا ہے جبکہ یہ بنا ہے عوام کیلئے مگر عوام کو بلا وجہ تنگ کیا جاتا ہے۔ امید ہے کہ چیف جسٹس صاحب کے اس اقدام سے چترال کے عوام کو ریلیف ملے گا اور لواری سرنگ کے سامنے سیکورٹی اہلکاروں کی وجہ سے بلا وجہ کئی گھنٹے انتظار کی سزا سے بچ جائیں گے



کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں