اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

7 نومبر، 2018

سپریم کورٹ: توہین عدالت کیس میں تحریک انصاف کے ایم این اے اور اینکرپرسن عامر لیاقت پر فرد جرم عائد کردی گئی

 

سپریم کورٹ: توہین عدالت کیس میں تحریک انصاف کے ایم این اے اور اینکرپرسن عامر لیاقت پر فرد جرم عائد کردی گئی

اسلام آباد (ویب ڈیسک) سپریم کورٹ  نے توہین عدالت کیس میں کراچی سے منتخب ہونے والے پاکستان تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی اور نجی نیوز چینل کے اینکر عامر لیاقت پر فرد جرم عائد کردی گئی ہے۔ تفصیلات کے مطابق  توہین عدالت کیس میں عامر لیاقت پر فرد جرم عائد کردی گئی ہے۔ چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے بینچ نے آج عامر لیاقت کے خلاف توہین عدالت کیس کی سماعت کی۔

سماعت کے دوران عامر لیاقت پر آرٹیکل (3) 204 کے تحت فرد جرم عائد کی گئی تاہم انہوں نے صحت جرم سے انکار کیا۔
اس موقع پر عامر لیاقت نے عدالت عظمیٰ سے غیرمشروط معافی مانگتے ہوئے کہا کہ 'میں خود کو عدالت کے رحم و کرم پر چھوڑتا ہوں۔ جسٹس اعجاز الا حسن نے ریمارکس دیئے کہ 'معافی کا وقت گزر چکا ہے، آج فرد جرم کے لیے تاریخ رکھی گئی تھی۔  عدالت عظمیٰ نے اپنے ریمارکس میں مزید کہا کہ 'عامر لیاقت نے 6 مارچ 2017 کے عدالتی حکم نامے کی خلاف ورزی کی ہے، جو توہین عدالت کے زمرے میں آتی ہے۔

سپریم کورٹ نے رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر عامر لیاقت پر فرد جرم عائد کردی۔ عدالت عظمیٰ نے ڈاکٹر عامر لیاقت کی غیر مشروط معافی بھی مسترد کردی۔ 29 نومبر تک شہادتیں پیش کرنے کی مہلت۔ڈاکٹرعامر لیاقت کا صحت جرم سے انکار کردیا ہے۔




کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں