اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

24 دسمبر، 2018

پاکستان پاورٹی الیویشین فنڈ نے 10 ملین یورو سے لاسیپ فیز2 کا آغاز کردیا، فیز1 سے 6 لاکھ افراد مستفید ہوئے، مقامی حکومت اور اتظامیہ کو بھی ساتھ شامل کرلیا

پاکستان پاورٹی الیویشین فنڈ نے 10 ملین یورو سے لاسیپ فیز2 کا آغاز کردیا، فیز1 سے 6 لاکھ افراد مستفید ہوئے، مقامی حکومت اور اتظامیہ کو بھی ساتھ شامل کرلیا

پشاور: لائیولی ہوڈ سپورٹ اینڈ پروموشن آف اسمال انفراسٹرکچر کمیونٹی پروگرام (LACIP) کے تحت خیبرپختونخوا کے ضلع بونیر میں ڈپٹی کمشنر آفس میں ڈسٹرکٹ ڈیولپمنٹ فورم (ڈی ڈی ایف) کا پہلا اجلاس منعقد ہوا۔ اس فورم کے قیام کا مقصد یہ ہے کہ ان پروجیکٹس کی منظم انداز سے نگرانی کی جائے جن پر پاکستان پاورٹی ایلیوئیشن فنڈ (پی پی اے ایف) کی جانب سے ایل اے سی آئی پی کے ذریعے کام کیا جارہا ہے۔ اس پروگرام کے دوسرے مرحلے پر عمل درآمد کا تخمینہ 10 ملین یورو ہے جس کے لئے جرمنی کے ترقیاتی بینک کے ایف ڈبلیو(KfW) کی جانب سے سرمایہ فراہم کیا جارہا ہے۔ اس کا مقصد یہ ہے کہ ناگہانی آفات سے پیدا ہونے والی مشکلات میں کمی ، معیار زندگی میں بہتری اور روزگار کے بہتر مواقع کے ذریعے ان اضلاع کے عام لوگوں کی زندگیوں میں بہتری لائی جائے۔ اس پروگرام میں ان علاقوں کی خواتین، مستحق اور معذور افراد کو خصوصی طور پر شامل کرنے پر توجہ دی گئی ہے۔ 

پی پی اے ایف کی کاوشوں کے نتیجے میں ڈی ڈی ایف کو خیبرپختونخوا حکومت کی جانب سے سال 2014 میں قائم کیا گیا جس کے تحت مقامی لوگوں کی ترقی کے لئے وسائل کی فراہمی کو یقینی بنایا جاتا ہے۔ 



اس اجلاس میں گاؤں کی سطح پر کونسل، تحصیل اور ضلع کے منتخب ناظمین، تحصیل دگر کے اسسٹنٹ کمشنر، محکمہ بلدیات کے حکومتی نمائندے، کے ایف ڈبلیو، این آر ایس پی، پی پی اے ایف اور این ای سی کنسلٹنٹس نے شرکت کی۔ 

بونیر کے ڈپٹی کمشنر شفیع اللہ خان نے ضلع بونیر کے ناظم ڈاکٹر عبیداللہ خان کے ہمراہ اجلاس کی صدارت کی۔ اجلاس میں دو اسسٹنٹ کمشنرز، گاؤں کی سطح پر کونسلز کے 14 افسران، 4 ضلعی کونسلرز اور ضلعی ناظمین نے بھی شرکت کی۔ اس موقع پر کے ایف ڈبلیو کے کوآرڈینیٹر گورننس شوکت علی، پی پی اے ایف کے سینئر جنرل منیجر محمد ندیم، این آر ایس پی کے ریجنل پروگرام آفیسر سعید رضا، اور این ای سی/ کے ایف ڈبلیو کے کنسلٹنٹ اظہر الدین بھی موجود تھے۔ 

پی پی اے ایف کے سینئر جنرل منیجر محمد ندیم نے ضلعی حکومت اور انتظامیہ کو بڑے پروجیکٹس کے لئے مشترکہ منصوبہ بندی، وسائل کی فراہمی اور عمل درآمد کی پیشکش کی تاکہ مقامی اسٹیک ہولڈرز اس سے زیادہ سے زیادہ فائدہ اٹھا سکیں۔ 

ڈپٹی کمشنر بونیر شفیع اللہ نے ضلع میں سماجی و معاشی ترقی کے لئے قابل ذکر فنڈز مختص کرنے پر کے ایف ڈبلیو اور پی پی اے ایف کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے متعلقہ دیہات میں تیزرفتاری سے پروجیکٹس پر عمل درآمد کے لئے مقامی حکومت اور انتظامیہ کے تعاون کی یقین دہانی کرائی۔ ضلعی انتظامیہ اور حکومت ضلع کی منتخب یونین کونسلز میں سماجی سطح پر رابطوں کے قیام اور غربت کے خاتمہ سے متعلق ترقیاتی سرگرمیاں سرانجام دے گی۔ 

ایل اے سی آئی پی کے پہلے مرحلے میں مقامی سطح پر انفراسٹرکچر کی تعمیر اور اثاثوں کی منتقلی بشمول معیار زندگی میں بہتری اور اچھی گورننس کی فراہمی سے 6 لاکھ غریب افراد کی معاشی ترقی میں تعاون فراہم کیا گیا۔ اس پروگرام کے دوسرے مرحلے کو اس طرح سے تیار کیا گیا ہے کہ انفراسٹرکچر کی ترقی، اثاثوں کی منتقلی اور مقامی حکومت کے ساتھ رابطے مستحکم کرنے کے ذریعے ڈیڑھ لاکھ افراد مستفید ہوں ۔



کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں