29 دسمبر، 2018

ممتاز ماہر تعلیم، شاعر، ادیب پرنسپل ریٹائرڈ انوار الدین کی خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔

 

ممتاز ماہر تعلیم، شاعر، ادیب پرنسپل ریٹائرڈ انوار الدین کی خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔



چترال(گل حماد فاروقی) چترال کے تاریحی قصبے دروش میں شاہ نگار گاؤں سے تعلق رکھنے والے ماہر تعلیم، شاعر اور ادیب انوار الدین انوار طویل علالت کے بعد خالق خقیقی سے جاملے۔ انہوں نے کچھ عرصہ پہلے آپریشن کیا تھا اس کے بعد اسے جگر کی کینسر ہوئی تھی۔وہ بستر مرگ پر پڑا رہا مگر اس دوران بھی اپنے مداحوں کو محظوظ کرتا رہا۔ انوار الدین انوار کینسر کے موذی مرض کے مقابلے میں ہار گئے اور آحر کر اس فانی دنیا سے کوچ کرگئے۔ ان کا نماز جنازہ شاہ نگار گاؤں میں ادا کی گئی جس میں اساتذہ، ان کے شاگروں، محکمہ تعلیم کے ڈسٹرکٹ ایجوکیشن افسر احسان اللہ، پولیس اور سول محکموں کے افسران کے علاوہ ہر طبقہ فکر سے تعلق رکھنے والے کثیر تعداد میں لوگوں نے شرکت کی۔ ان کو ہزاروں اشکبار آنکھوں کے سامنے اپنے اہی گھر کے قریب سپرد خاک کیا گیا۔

انوار الدین آحری ایام میں گورنمنٹ ہائیر سیکنڈری سکول دروش کے پرنسپل تھے جہاں وہ بیمار پڑ گئے اور جگر کے کینسر میں مبتلا ہوگئے۔ وہ نہایت سادہ مزاج او ر خوش اخلاق انسان تھے عمر بھر اس نے نہایت ایمانداری کے ساتھ ملازمت کی اور ان پر کبھی بھی کسی قسم کی غبن کا الزام نہیں لگا۔ ان کی یاد میں بونی کے شعراء اور ادباء کے تنظیم نے ایک تعزیتی اجلاس بھی بلایا جس میں مرحوم انوار الدین کو خراج تحسین پیش کیا گیا اور ان کی خدمات کو ہمیشہ کیلئے یاد رکھنے کا عزم کیا گیا۔ 


کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں